معاشی چیلنجز شدت اختیار کررہے ہیں ، ذیشان گورمانی

  معاشی چیلنجز شدت اختیار کررہے ہیں ، ذیشان گورمانی

  



کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)سابق ممبر صوبائی اسمبلی محمدذیشان گورمانی نے کہا ہے کہ پاکستان نقصان اٹھانے کا متحمل نہیں ہوسکتا ،(بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

سیاسی جماعتیں احتجاج اور دھرنوں کی سیاست کرکے ملک کو بھاری نقصان پہنچانے کے بجائے سب سے پہلے ملک کے مفادات مد نظر رکھیں،ملک کو پہلے ہی بہت سے چیلنجز درپیش ہیں،حلقہ کی عوام کیلئے ان کے دروازے ہروقت کھلے ہیں،اقتدارکے بغیرعوام کے مسائل حل کرنے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کیا جائے گا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز موضع لدھا لنگر میں معروف سیاسی شخصیت فاروق خان گرمانی،ارشد خان گرمانی اور طارق گرمانی کی جانب سے دیے گئے ظہرانے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ تمام طبقات ہائے فکر بالخصوص سیاستدانوں کو ملک کے معاشی حالات بہتر بنانے کے لیے اپنا بہترین کردار ادا کرنے کے ساتھ ساتھ سیاسی انارکی پھیلانے سے گریز کرنا چاہیے، وقت گزرنے کے ساتھ ملک کے لیے معاشی چیلنجز شدت اختیار کرتے جارہے ہیں ،ان حالات میں ملک سیاسی انارکی کا ہرگز متحمل نہیں ہوسکتا اگر سیاسی انارکی پھیلتی رہی تو حالات مزید خراب ہونے کا اندیشہ ہے،انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں احتجاج اور دھرنوں کی سیاست کرکے ملک کو بھاری نقصان پہنچانے کے بجائے سب سے پہلے ملک کے مفادات مد نظر رکھیں اور اپنا مثبت کردار ادا کریں، ذاتی مفادات کی سیاست کو ترک کرنا اور ملک میں تجارتی و معاشی سرگرمیاں پھلنے پھولنے دینا ہر ایک کا فرض ہے،ماضی میں احتجاج اور دھرنوں کی سیاست کی وجہ سے ملک کو اربوں ڈالر کا نقصان ہوچکا ہے ،ان حالات میں جب ملک کو بہت سے معاشی چیلنجز کا سامنا ہے، یہ کسی بھی معاشی نقصان کا متحمل نہیں ہوسکتا۔ظہرانے میں فاروق خان گرمانی، ارشد خان، حاجی خادم خان،حاجی غلام شبیر خان،امجد خان،حاجی رضا خان،امجد خان،عتیق خان، طارق خان گرمانی،عارف خان گرمانی سمیت عمائدین علاقہ بھی موجود تھے۔

ذیشان گورمانی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...