عدالتی تحویل میں زرضمانت رقم خورد برد،رجسٹرار ہائیکورٹ سے جواب طلب

عدالتی تحویل میں زرضمانت رقم خورد برد،رجسٹرار ہائیکورٹ سے جواب طلب

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس رسال حسن سید نے عدالتی تحویل میں زرضمانت کے طور پررکھی گئی ایک کروڑتیس لاکھ روپے کی خوردبردکی گئی رقم کی ادائیگی کے کیس میں رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ سے جواب طلب کرلیاہے۔اس سلسلے میں پنجاب حکومت نے درخواست دائر کی ہے جس میں کہاگیاہے کہ لاہور ہائی کورٹ کی انتظامی کمیٹی کی طرف سے ایک کروڑ30لاکھ روپے کی ادائیگی کے لئے پنجاب حکومت کو جاری کیا گیا حکم قانون سے مطابقت نہیں رکھتا،اس حکم کو کالعدم قراردیاجائے،سرکاری وکیل نے کہا کہ بیوہ خاتون کی رقم سول جج کی عدالت میں جمع ہوئی تھی جس کے بعد اسے خوردبرد کرلیاگیا،سپریم کورٹ نے معاملے کا نوٹس لیااورمتعلقہ سول ججوں اور عدالتی عملے کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی، خاتون کو رقم کی ادائیگی کے لئے پنجاب حکومت کو ہدایت کردی،یہ معاملہ اب کابینہ میں زیرغورہے،نبیلہ نامی بیوہ خاتون کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیارکیا کہ عدالت عالیہ کی انتظامی کمیٹی نے حکومت پنجاب کوبیوہ کی رقم کی ادائیگی کی ہدایت کی،اس کی رقم امانت کے طور پر رکھی گئی تھی جس میں خیانت کی گئی،سپریم کورٹ اور عدالت عالیہ کی انتظامی کمیٹی کے فیصلے پر عمل درآمد کا حکم دیا جائے۔

رقم خورد برد

مزید : صفحہ آخر