حکومتی پیش کردہ بلز، بذریعہ آرڈیننس قانون سازی غیر قانونی، متحدہ اپوزیشن 

    حکومتی پیش کردہ بلز، بذریعہ آرڈیننس قانون سازی غیر قانونی، متحدہ ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) متحدہ اپوزیشن نے حکومت کی جانب سے پیش کر دہ کئی بلز اور آر ڈیننس کے ذریعے قانونی سازی کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا ہے سپریم کورٹ جلد ڈپٹی سپیکر کی اسمبلی سیٹ کا فیصلہ کرے،اپوزیشن ڈپٹی سپیکر کیخلاف تحریک عدم اعتماد لا ئیگی،پچھلے چار سال سے فارن فنڈنگ کا معاملہ لٹک رہا ہے،آزادی مارچ کے شرکا سے سی ڈی اے کا عملہ اور پولیس کھانا کھا رہی ہے، ان کو کوئی سہولت نہیں،ہم ملک میں فری اینڈ فیئر اور حقیقی عوامی انتخابات چاہتے ہیں۔ جمعرات کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہاایوان کی جو کارروائی ہوئی اس کی کوئی آئینی حیثیت نہیں، کی گئی قانون سازی غیر قانونی ہے،مخصوص ایجنڈے پر ایوان چلاکر مقصد پورا کیا پھر ملتوی کردیا گیا۔ آزادی مارچ کو آج اسلام آباد میں ساتواں دن ہے،شرکاء مارچ کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں، آزادی مارچ کی جدوجہد آئینی، آزادی مارچ میں تین ہارٹ اٹیک ہوئے لیکن ان کو بھی سہولیات نہیں دی گئیں، سرکاری ہسپتالوں کو مارچ کے شرکا کو طبی سہولیات دینے سے منع،سرکاری مساجد، پانی بند کردیا گیا ہے، آزادی مارچ سے شرکا کی گاڑیاں اور موٹر سا ئیکل چوری ہورہے ہیں۔ آزادی مارچ کے شرکا مکمل نظم و ضبط کا مظاہرہ اور قانون کا مکمل احترام کر رہے ہیں،حکومت نے میٹرو بند کر رکھی ہے جس سے سرکاری ملازمین کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔سابق سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے کہاسپریم کورٹ کو جلد ڈپٹی سپیکر کی اسمبلی سیٹ کا فیصلہ کرنا چاہئے، سپریم کورٹ نے پتا نہیں اپنے فیصلے میں ڈپٹی سپیکر کو ری سٹور کا کیوں لفظ لکھا؟یہ ایک اہم عہدہ ہے اس کا جلدی فیصلہ ہونا چاہیے،ہم عدالت عظمی کا احترام کرتے ہیں،ہم ڈپٹی سپیکر کیخلاف تحریک عدم لائیں گے۔جے یو آئی کے اسعد محمود نے کہاچودہ ماہ سے سیاسی جماعت کے نام پر ایک قبضہ گروپ حکمرانی کر رہا ہے، ملک کے حکومت پارلیمانی دہشت گردی کر رہی ہے۔پارلیمان کے ایوان اور اس کے نمائندوں کی بی توقیری کی جارہی ہے، پورے ملک میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سراپا احتجاج ہے۔ آزادی مارچ کراچی سے شروع ہوا اور اسلام آباد میں جاری ہے، شرکا موسمی تکالیف برداشت کرتے ہوئے قوم کیلئے فرض کفایہ ادا کر رہے ہیں۔ ناجائز حکومت کیلئے ملک کو داؤ پر لگانا درست نہیں۔ آزادی مارچ میں شریک انصار الاسلام کے کارکنوں کو سلام پیش کرتا ہوں،ہم دوبارہ انتخابات کی بات کر رہے ہیں، مزید غلامی برداشت نہیں کرسکتے۔

متحدہ اپوزیشن

مزید : علاقائی