سنگین نوعیت کے کیسوں میں پیش ہونے والے گواہوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے بنائے جانیوالا یونٹ ابھی تک قائم نہ ہوسکا

سنگین نوعیت کے کیسوں میں پیش ہونے والے گواہوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے بنائے ...

  



لاہور(نامہ نگار)عدالتوں میں سنگین نوعیت کے کیسوں میں پیش ہونے والے گواہوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے بنائے جانے والا یونٹ ابھی تک قائم نہ ہوسکا،یہی وجہ ہے کہ گواہ تحفظ نہ ملنے کی وجہ سے عدالتوں میں گواہی دینے سے اجتناب کر رہے ہیں،سیشن کورٹ اور دیگر عدالتوں سے گواہوں کے روزانہ وارنٹ جاری کئے جا رہے ہیں لیکن تحفظ نہ ملنے کی وجہ سے گواہ عدالتوں میں نہیں آ رہے اور کیس التوا ء کاشکارہیں،ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹر راے مشتاق احمد نے گواہوں کی پریشانی کو مدنظر رکھتے ہوے ڈی آئی جی آپریشنز،ایس پی انوسٹی گیشن کو پنجاب ویٹنس پروٹیکشن ایکٹ 2018ء پر عمل درآمد کرانے کے لئے مراسلہ بھجوایا ہے،ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹر راے مشتاق احمد کا کہنا ہے کہ گواہوں کو عدالتوں تک لانے میں ہمیں بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

مزید : علاقائی