مقبوضہ کشمیر میں 96ویں روز بھی نظا م زندگی مفلوج

  مقبوضہ کشمیر میں 96ویں روز بھی نظا م زندگی مفلوج

  



سرینگر/نئی دہلی(این این آئی) مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 96ویں روزبھی نظا م زندگی بری طرح مفلوج رہا،دکانیں بند اور پبلک ٹرانسپورٹ معطل ہے جبکہ سکول اور دفاتر ویرانی کا منظر پیش کرر ہے ہیں، انٹرنیٹ اور پر ی پیڈ موبائل فون سروسز مسلسل معطل ہیں جبکہ دفعہ 144کے تحت مقبوضہ علاقے میں پابندیاں نافذ ہیں۔دوسری جانب مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس نے کہاہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اور آر ایس ایس مقبوضہ علاقے میں اپنے ہندتوا ایجنڈے کے نفاذپرتلی ہوئی ہیں۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں نام نہاد بھارت نواز جماعتوں سے وابستہ سیاست دانوں کوخبردار کیاکہ انہیں کسی بھی صورت میں بی جے پی اور آر ایس ایس کے ساتھ تعاون نہیں کرناچاہیے جنہوں نے کشمیریوں کو ان کی شناخت سے محروم کر دیا ہے۔ ترجمان نے کہاکہ کشمیری عوام بی جے پی کے معاونین کو اپنا دشمن اور کشمیر کاذ سے غدار ی کا مرتکب سمجھیں گے۔علاوہ ازیں جمعیت علمائے ہند کے سربراہ سید ارشد مدنی نے نئی دہلی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بھارتی حکومت پر کشمیری عوام کو اعتماد میں لینے اور تنازع کشمیر کے حل کیلئے مذاکرات شروع کرنے پر زوردیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ انہیں کشمیری عوام کی شدید فکر ہے جنہیں صحت کی سہولتوں سمیت بنیادی انسانی حقوق سے محروم کردیاگیا ہے۔ یورپی یونین کی پریذیڈنسی کونسل کی صدر فن لینڈ کے وزیر خارجہ پکا ہاوستونے کہاہے کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال معمول کے مطابق نہیں ہے۔انہوں نے نئی دہلی میں ایک انٹرویو میں کہاکہ بھارت کو اقوام متحدہ کے مبصرین اور سفارتی مشنوں کو مقبوضہ کشمیر کے دورے کی اجازت دینی چاہیے۔انہوں نے منتخب یورپی قانون سازوں کے وفد کے گزشتہ ہفتے کے مقبوضہ کشمیرکے دورے کومسترد کردیا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول