سڑکوں کا دھنس جانا حکومتی اداروں کے لیے سوالیہ نشان ہے ٗحافظ نعیم الرحمن 

سڑکوں کا دھنس جانا حکومتی اداروں کے لیے سوالیہ نشان ہے ٗحافظ نعیم الرحمن 

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے ریڈ زون ایریا،عبد اللہ ہارون روڈ، صدر روڈ،کنٹونمنٹ بورڈ روڈ سمیت شہر بھر میں اہم شاہراؤں سے گزرنے والی سیوریج لائن بیٹھ جانے کے باعث سڑکوں پر گہرے گڑھے پڑنے پر حکومت کی بے حسی اور لاپرواہی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود سڑکوں میں گہرے گڑھے پڑجانا حکومتی اداروں کے لیے سوالیہ نشان ہے، کراچی کے عوام پہلے ہی کچرے سے پریشان تھے اور اب اہم سڑکیں بھی دھنسنا شروع ہو گئی ہیں جس کے باعث عوام شدید ذہنی وجسمانی اذیت کا شکار ہیں،کراچی کے ریڈ زون کے علاقے میں دودن کے دوران مصروف سڑکیں دھنس گئیں، حالانکہ 2ماہ قبل ہی وزیر اعلیٰ ہاؤس، ڈاکٹر ضیاء الدین روڈ کی مرمت پر اربوں روپے خرچ کیے گئے اورحال ہی میں کئی کروڑ روپے کی لاگت سے عبد اللہ ہارون روڈ جانے والی سڑک تعمیر کی گئی تھی جو کہ اب تباہ حالی کا منظر پیش کررہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اخباری اطلاعات کے مطابق کلب روڈ سیور یج لائن دھنسنے کے بعد وزیراعلی ہاؤس کے سامنے سے گزرنے والی سڑ ک ڈا کٹر ضیا الدین احمد روڈ کی سیوریج لائن بھی ٹوٹ گئی جس کے بعد ٹر یفک پولیس نے ضیا الدین احمد کو بھی ٹریفک کیلئے بند کر دیااورشارع فیصل، میٹرو پول ہوٹل، ایوان صدر روڈ، فورا چو ک، فاطمہ جناح روڈ اور اس کے اطراف کے علا قوں میں بد ترین ٹریفک جام ہو گیا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں جس کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامناکرنا پڑرہا ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت اور متعلقہ ادارے فوری اور ترجیحی بنیادوں پر سڑکوں کی مرمت کا کام کرائے تاکہ شہر میں ٹریفک کی روانی متاثر نہ ہواور کراچی کے عوام کو کچھ نہ کچھ ریلیف مہیا ہوسکے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر /میٹروپولیٹن 4


loading...