تیمرگرہ،ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس کی ہڑتال 45 ویں روز میں داخل

  تیمرگرہ،ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس کی ہڑتال 45 ویں روز میں داخل

  



تیمرگرہ (بیورورپورٹ)ہسپتالوں کی نجکاری کے خلاف ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال تیمرگرہ سمیت لوئر دیر کے تمام چھوٹے بڑے ہسپتالوں میں ڈاکٹروں، پیر امیڈیکس، نرسز اور کلاس فور ملازمین کا ہڑتال 45 ویں روز میں داخل،جس کی وجہ سے دور دراز علاقوں سے آئے ہوئے مریضوں کو شدید مشکلا ت کا سا مناہے اور ہسپتالوں میں مریضوں کو صرف ایمرجنسی میں علاج کی سہولت دی جارہی ہے جبکہ ہسپتالوں کے اوپی ڈی، ایکسرے، لیبار ٹریز سمیت تمام شعبہ جات بند ہے اس حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ ابھی تک دیر لوئرمیں تقریبا ہزار  سے زائدمریض علاج معالجہ کے بغیرگھر وں کو واپس چلے گئے ہیں اور سینکڑوں مریضوں کے اپریشن التوا کا شکار ہیں ڈاکٹروں اور حکومت کے درمیان جاری محاذ ارائی سے عوام رُل گئے اس حوالے  ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن لوئر یر کے صدر ڈاکٹر رفیع اللہ میڈیاسے گفتگو کرتے کہا کہ ڈاکٹروں کا ہڑتال 45 ویں روزمیں داخل ہو گیا ہے لیکن صوبائی حکومت ٹھس سے مس نہیں ہورہی ہے انھوں نے کہا کہ حکومت ڈاکٹروں کے ساتھ مذ کرات کرکے ڈاکٹروں کو قائل کریں کہ وہ غلطی پر تو ہم اپنا احتجاج واپس لینگے  انھوں نے کہا کہ ڈاکٹرز حکومت کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں انھوں نے کہا کہ 11 نومبر ڈاکٹرزایسوسی ایشن پشاور میں اپنے قوت کا مظاہرہ کرینگے اور اسمبلی کے سامنے دھرنا دینگے 

مزید : صفحہ اول