مولاناصاحب ضد اور ہٹ دھرمی چھوڑیں، 1973 کے آئین کے تناظر میں۔ ۔ ۔ فردوس عاشق اعوان پھر بول پڑیں

مولاناصاحب ضد اور ہٹ دھرمی چھوڑیں، 1973 کے آئین کے تناظر میں۔ ۔ ۔ فردوس عاشق ...
مولاناصاحب ضد اور ہٹ دھرمی چھوڑیں، 1973 کے آئین کے تناظر میں۔ ۔ ۔ فردوس عاشق اعوان پھر بول پڑیں

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے مولانا فضل الرحمان سے کہا کہ مولانا صاحب! عوام سے مسترد ہونے پر ذاتی انتقام کا بدلہ قوم کو ذہنی اذیت سے دوچارکرکے نہ لیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پرفردوس عاشق اعوان نے لکھا کہ ضد اور ہٹ دھرمی چھوڑ دیں،عوام نے آپ کو مسترد کر دیا تو اس کا بدلہ قوم قوم سے مت لیں، کارکنان کو یخ بستہ ہواوں کی نذر کر کے ظلم نہ کریں۔ " 1973 کے آئین کے تناظر" میں جمہوریت اور آئینی اصولوں کی پاسداری کریں۔

انہوں نے لکھا کہ "مذاکرات جمہوری عمل کا نام ہے جس کے آپ خود داعی رہے ہیں۔مذاکرات کو بے معنی قرار دے کر اپنے ذہن کی کھڑکیوں کوکیوں بند رکھنا چاہتے؟وہم کا علاج لقمان حکیم کے پاس بھی نہیں تھا"

انہوں نے موقف اپنا یا کہ "مولانا صاحب! انتخابات میں اگر دھاندلی ہوئی تھی تو آپ نے صدر کا الیکشن کیوں لڑا تھا؟آپ کے صاحب زادے نے ایم این اے کا حلف کیوں اٹھایاتھا؟ایک سال بعد دھاندلی کا واویلا عوام کو گمراہ اور جمہوری نظام کو کمزور کرنے کے سوا کچھ نہیں"۔

انہوں نے لکھا کہ " سیاسی تنہائی کا شکار مولانا ذاتی مفادات کی عینک اتار کر دیکھیں تو پتہ چلے گا کہ پاکستان تنہائی کا شکار نہیں۔وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں نئے پاکستان کا تشخص پوری دنیا میں ابھر کر سامنے آرہا ہے"۔

ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان کی ٹوئیٹس پر ایک صارف نے لکھا کہ "ان کا حال یہ ہے کہ محمود اچکزئی جس بندے ہارا ہے وہ جمعیت علماء اسلام کا ہے اور دونوں اس وقت ایک ہی کنٹینر پر کھڑے ہو کر دھاندلی دھاندلی کا رونا رو رہے ہیں ۔ اچکزئی کو چاہیئے کہ مولانا کی پارٹی پر کیس کر دے کہ اُن کا امیدوار دھاندلی سے جیتا ہے ورنہ اصل میں اُن کو جیتنا تھا"۔

عمر باجوہ نے لکھا کہ "صحیح آئینہ دکھایا"

عائشہ نامی صارف نے لکھا کہ "فضل الرحمن جب صدر پاکستان کا الیکشن لڑ رہا تھا تب حکومت اصلی تھی جب ناکامی ہوئی تو حکومت جعلی ہوگئی"

خیال محمد نے لکھا کہ "اور دھاندلی کا یہ واویلا ایک سال بعد نہیں پہلے دن سے ہیں بلکہ انخابات کے ریزلٹ ابھی کلئیر بھی نہیں ھوئے تھے کہ یہ واویلا تمام اہوزیشن اور خصوصاً عام لوگوں نے شروع کیا تھا ۔۔۔بے تحاشا ویڈیوز ٹبوت سوشل میڈیا پہ موجود ہیں"۔

ایک اور صارف نے لکھا کہ "باجی اعوان صاحبہ یہی تو سیاست ہے شیخ رشید اور آپ لوگوں نے قوم کو سکھایا جو بویا تھا اب وہیں کاٹیں"

مزید : قومی /سیاست


loading...