”آپ کنٹینر پر چڑھ کر ڈانس کرتے تھے مجھے نہیں پتا تھا کہ آپ ۔۔۔“خواجہ آصف قومی اسمبلی میں پرویز خٹک کو ’جگت ‘لگا دی

”آپ کنٹینر پر چڑھ کر ڈانس کرتے تھے مجھے نہیں پتا تھا کہ آپ ۔۔۔“خواجہ آصف ...
”آپ کنٹینر پر چڑھ کر ڈانس کرتے تھے مجھے نہیں پتا تھا کہ آپ ۔۔۔“خواجہ آصف قومی اسمبلی میں پرویز خٹک کو ’جگت ‘لگا دی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر خارجہ خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں گرج برس کر تقریر کی اور حکومت پر تنقید کے تیر چلائے ، انہوں نے پرویز خٹک کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ گر اسی طرح کے رویے رہے تو زیادہ دور نہیں کہ یہ سارا نظام لپیٹ دیا جائے گا ، ان کو یہا حساس نہیں ہے ، خٹک صاحب جمہوریت کا بیڑاغرق ہو گا ، جب اداروں کا بیڑا غرق ہو گا تو جمہوریت کا بیڑا غرق ہو گا، یہ آپ بوئے بیج ہیں ،آپ کنٹینر پر چڑھ کر ڈانس کرتے تھے مجھے نہیں پتا تھا کہ آپ یہ کام بھی کرتے ہیں ۔

خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ جو کچھ ایوان میں ہوا وہ پارلیمانی تاریخ کا سیاہ ترین دن تھا ، ہماری تقریروں کو میوٹ کیا گیا ، اگر ہمیں یہاں اظہار رائے کی آزادی نہیں ہے تو میں سمجھتاہوں کہ جمہوریت نام کی اس ملک میں کوئی چیز نہیں ہے ، ایک ایسا شخص جو 65 ہزار جعلی ووٹوں سے نااہل ہوا اس نے کل اس ایوان کی اس کرسی پر بیٹھ کر توہین کی ، کل تک سٹے حرام تھا اور آج حلال ہو گیا ، کل تک نیازی صاحب کہتے تھے کہ سٹے کے پیچھے چھپے ہوئے ہیں ، آج ایک شخص سٹے کے پیچھے چھپا ہواہے اور آپ کی کرسی پر بیٹھ کر اس نے اس ایوان کا سیاہ ترین دن دکھایا ہے ۔

خواجہ آصف کا کہناتھا کہ 12 آرڈیننس کسی بھی طریقہ کار کے بغیر اس ایوان میں پاس کیے گئے ، نیازی صاحب اپنے دفتر میں بیٹھ کر دیکھتے رہے کہ بچے جمہورے کیا کر رہے ہیں کر سیوں پر بیٹھ کر ، جس طرح قانون سازی ہوئی سارا ایوان اس کیلئے شرمسار ہوا۔ انہوں نے کہا کہ کل ایوان کیلئے کوئی ایک اچھا شگون نہیں تھا ، اگر اسی طرح کے رویے رہے تو زیادہ دور نہیں کہ یہ سارا نظام لپیٹ دیا جائے گا ، ان کو یہا حساس نہیں ہے ، خٹک صاحب جمہوریت کا بیڑاغرق ہو گا ، جب اداروں کا بیڑا غرق ہو گا تو جمہوریت کا بیڑا غرق ہو گا، یہ آپ بوئے بیج ہیں ،آپ کنٹینر پر چڑھ کر ڈانس کرتے تھے مجھے نہیں پتا تھا کہ آپ یہ کام بھی کرتے ہیں ۔

مزید : قومی


loading...