اگر کرپشن پر گرفتاریاں انتقامی کارروائی ہیں تو انسانی حقوق کمیٹی میں جائیں، شبلی فراز

اگر کرپشن پر گرفتاریاں انتقامی کارروائی ہیں تو انسانی حقوق کمیٹی میں جائیں، ...
اگر کرپشن پر گرفتاریاں انتقامی کارروائی ہیں تو انسانی حقوق کمیٹی میں جائیں، شبلی فراز

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پی ٹی آئی سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ اگر کرپشن پر گرفتاریاں انتقامی کارروائی ہیں تو انسانی حقوق کمیٹی میں جائیں،جوبھی گرفتار ہوتا ہے اسے سیاسی انتقامی کارروائی کہا جاتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی سینیٹر شبلی فراز نے سینیٹ اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر کرپشن پر گرفتاریاں انتقامی کارروائی ہیں تو انسانی حقوق کمیٹی میں جائیں،جوبھی گرفتار ہوتا ہے اسے سیاسی انتقامی کارروائی کہا جاتا ہے۔،یہ کرپشن ہے،سیاسی انتقامی کارروائی نہیں ہے،جن کیسزمیں سیاسی رہنما گرفتار ہوئے یہ ہمارے بنائے ہوئے کیسز نہیں ہیں بلکہ ہم تو ابھی بنا رہے ہیں،نیب کا کالا قانون ہے توپچھلے 10 سال میں آپ نے کیا کیا؟آپ دونوں ایک دوسرے کو پھنسا رہے تھے،ہم ان دونوں جماعتوں سے تنگ آگئے تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن والے خود کو لبرل کہتے ہیں لیکن انھوں مولانا فضل الرحمان کو اپنا لیڈرمان لیا ہے،ان کو چاہیے کہ وہ اب بھٹو اور بینظیر کا نام نہ لیں،آپ بھٹو اور بے نظیر بھٹو کے فلسفے کے خلاف چل رہے ہیں۔

مزید : قومی


loading...