جنرل کیانی کا بیان جمہوری عمل کے لئے نیک شگون ہے،ڈاکٹر وسیم اختر

جنرل کیانی کا بیان جمہوری عمل کے لئے نیک شگون ہے،ڈاکٹر وسیم اختر

لاہور(سٹاف رپورٹر)ممبر صوبائی اسمبلی و پارلیمانی لیڈر اور امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے آرمی چیف جنرل اشفاق پرویز کیانی کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ ادارے شخصیات سے زیادہ اہم ہوتے ہیں یہ بیان جمہوری عمل کے لئے نیک شگون ہے۔نئے آرمی چیف کا تقرر سنیارٹی پر ہوناچاہئے۔جنرل کیانی کے بیان کے بعدافواہیں اور گومگوکی کیفیت ختم ہوجانی چاہئے۔پاک فوج وطن عزیز کا لازم ملزوم دفاعی ادارہ ہے جس نے کئی مواقع پر عظیم قربانیاں دیں۔مشرف کے برعکس جنرل کیانی نے جس طرح فوج کے کھوئے ہوئے وقار کو بحال کیا قابل تعریف ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ آج ملک کوکئی قسم کے سنگین خطرات کا سامنا ہے۔دشمن ہر طرف سے اور ہر طرح ہم پر حملہ آور ہے۔رائ،موساد اور سی آئی اے نیٹ ورک کھلم کھلا دہشت گردی کی وارداتیں کررہے ہیں۔بعض عناصر 40ہزار بے گناہ قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے اور 100ارب ڈالرکے معاشی نقصان کے باوجود دہشت گردی کی نام نہاد جنگ کو پاکستان کے ساتھ منسلک کرنے پر بضد ہیں۔یہ جنگ نہ کبھی ہماری تھی اور نہ کبھی ہوسکتی ہے لہٰذا اسے فوری خیر باد کہا جائے۔جماعت اسلامی کے رہنما ڈاکٹر سید وسیم اختر نے مزید کہاکہ ملک ایک نازک دور سے گزررہا ہے۔آج جس قدر اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت ہے پہلے کبھی نہ تھی۔تمام دینی و سیاسی جماعتوں کو اپنا مثبت کردار اداکرنا ہوگا۔ حکمرانوںنے پاکستان کی عزت ،وقار،آزادی،خوشحالی اور دفاع سب کچھ داﺅپر لگادیا ہے۔حکومت اے پی سی کے فیصلوںپر عملدرآمد کرتے ہوئے طالبان سے مذاکرات شروع کرے۔ملک دشمن قوتیں نہیں چاہتیں کہ مذاکرات ہوں اور پاکستان میں امن قائم ہوسکے۔ڈرون حملے موجودہ حکمرانوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1