سعودی عرب میں پہلی خاتون وکیل کو پریکٹس کا لائسنس مل گیا

سعودی عرب میں پہلی خاتون وکیل کو پریکٹس کا لائسنس مل گیا

ریاض(این این آئی)سعودی عرب میں پہلی خاتون وکیل کو پیشہ وکالت اختیار کرنے اور بطور وکیل عدالتوں میں پیش ہونے کیلیے باضابطہ طور پر لائسنس جاری کر دیا گیا ۔ یہ لائسنس سعودی وزارت انصاف نے بایان الزہران نامی خاتون وکیل کو جاری کیا ۔عرب ٹی وی سے گفتگوکرے ہوئے بایان الزہران نے کہا کہ وکالت کا لائسنس لینا ہمارے حقوق میں سے ایک حق ہے، ہم اسے اس وقت حاصل نہ کر سکے جب تک قانون کے آرٹیکل 3 کے مطابق عائد کردہ شرائط پوری نہیں کیں۔پہلی سعودی خاتون وکیل نے شاہ عبداللہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ شاہ عبداللہ نے ثابت کیا ہے کہ انہوں نے ہمارے مستقبل کے راستے کو روشن کیا ہے تاکہ ہم اپنے پیارے ملک کی خدمت کر سکیں۔سعودی وزارت انصاف کے ترجمان نے بتایا کہ رجسٹرڈ وکلا کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے، رواں سال کے دوران 200 نئے وکلا کی رجسٹریشن ہوئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر