شوگر اور دل کی بیماریاں،پاکستانیوں کے لئے بہت بری خبر آگئی

شوگر اور دل کی بیماریاں،پاکستانیوں کے لئے بہت بری خبر آگئی
شوگر اور دل کی بیماریاں،پاکستانیوں کے لئے بہت بری خبر آگئی

  

لندن(نیوزڈیسک)اکثر خیال کیا جاتا ہے کہ شوگر اور دل کی بیماریاں درمیانی عمر میں لاحق ہوتی ہیں لیکن ایک تازہ تحقیق میں چونکا دینے والا انکشاف ہوا ہے۔

South Asian Birth Cohort کی جانب سے کی گئی تحقیق میں بتایا گیاہے کہ جنوبی ایشیاءکے لوگوں(یاد رہے کہ جنوبی ایشیاءمیں پاکستان بھی شامل ہے)کو شوگر اور دل کی بیماری کاآغاز پیدائش کے فوراًبعد ہوجاتا ہے۔ضروری نہیں کہ پیدا ہونے والا ہر بچہ ان بیماریوں کا شکار ہو لیکن اکثریت کو ان مسائل کا سامنا کرنا پڑجاتا ہے۔

نامعلوم کالرز کی معلومات دینے والی حیران کن ایپ اردومیں بھی دستیاب

تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ماں کو ان مسائل کا سامنا ہوتو پیدا ہونے والے بچے پر اس کے اثرات بڑھتے ہیں اور اس میں یہ بیماریاں منتقل ہونے کے امکانات بہت زیادہ بڑھ جاتے ہیں۔لہذا اس بات کی اشد ضرورت ہے کہ لوگوں کو ان بیماریوں کے خطرناک اثرات سے آگاہ کیا جائے اور انہیں اس سے بچنے کے لئے ورزشیں اورخوراک کے بارے میں بتایا جائے۔اگر ماں صحت مند ہوگی تو پیدا ہونے والا بچہ بھی بیماریوں سے محفوظ رہے گا۔

مزید :

تعلیم و صحت -