داعش کے پاس ٹویوٹا کی اتنی گاڑیاں کہاں سے آئیں؟ تحقیقات شروع

داعش کے پاس ٹویوٹا کی اتنی گاڑیاں کہاں سے آئیں؟ تحقیقات شروع
داعش کے پاس ٹویوٹا کی اتنی گاڑیاں کہاں سے آئیں؟ تحقیقات شروع

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) داعش کے خلاف روس کے میدان میں اترنے کے بعد امریکہ کی بھی آنکھ کھل گئی ہے اور اس نے بھی داعش کے حوالے سے مختلف معاملوں پر تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ امریکہ خاص طور پر یہ جاننے کی کوشش کر رہا ہے کہ داعش اپنی بدنام زمانہ ”ٹویوٹا ڈبل کیبن“ گاڑیاں اور ایس یو ویز(SUVs)کہاں سے حاصل کرتی ہے، جن میں اس کے شدت پسند قافلوں کی صورت میں سفر کرتے ہیں۔

نامعلوم کالرز کی معلومات دینے والی حیران کن ایپ اردومیں بھی دستیاب

ٹویوٹا کی یہ گاڑیاں داعش کی سوشل میڈیا پر شیئر کی جانے والی تمام ویڈیوز میں نمایاں طور پر دکھائی جاتی ہیں اور امریکی ٹریژری ڈیپارٹمنٹ کا ٹیرر فنانسنگ یونٹ یہ سراغ لگانے کی کوشش کر رہا ہے کہ داعش کو یہ گاڑیاں کیسے پہنچتی ہیں۔دنیا کی دوسری بڑی آٹو مینوفیکچرر ٹویوٹا پہلے ہی بیان دے چکی ہے کہ وہ اپنی گاڑیاں داعش کے زیراستعمال ہونے کے حوالے سے ایک انکوائری میں مکمل تعاون کر رہے ہیں لیکن وہ یہ نہیں جانتے کہ ان کی گاڑیاں داعش کے پاس کیسے اور کہاں سے پہنچی ہیں۔ٹویوٹاکا کہنا تھا کہ ”ہم نے ٹریژری کو بریفنگ دی ہے کہ ہم اپنی گاڑیاں مشرق وسطیٰ میں کیسے سپلائی کرتے ہیں۔ “

نوجوان سعودی خواتین بلیک میلنگ کرنے لگیں، عربی ماہرین نے خبردار کر دیا

مزید :

بین الاقوامی -