یونین کونسل 263میں (ن) لیگ اور 262میں پی ٹی آئی کا پلڑا بھاری

یونین کونسل 263میں (ن) لیگ اور 262میں پی ٹی آئی کا پلڑا بھاری

  

مانگا منڈی(ملک ممتاز حسین)مانگا منڈی کے علاقہ کی2یونین کونسلوں میں بلدیاتی انتخابات میں الیکشن کی تیاریاں عروج پر ،دونوں یونین کونسلوں میں مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے امیدواروں کے مابین زبردست کانٹے دار مقابلہ ہونے کی توقع تفصیلات کے مطابق یونین کونسل 263میں مسلم لیگ (ن)کی طرف سے یوسی کے سابق نائب ناظم اور چیئرمین کے امیدوار چوہدری محمد یونس گجر اور تحریک انصاف کی طرف سے سماجی سیاسی کارکن چوہدری نذیر احمد گجر چیئرمین کے امیدوار ہیں ان کے علاوہ ملک لیاقت جھیڈ اور قلعہ تڑے مانگا سے رانا محمد اسلم آزاد چیئرمین کے امیدوار ہیں مسلم لیگ (ن)کی طرف سے چیئرمین کے نامزد امیدوار چوہدری محمد یونس گجر 2دفعہ اسی حلقہ سے نائب ناظم بن کر اپنے حلقہ کی عوام کی خدمت کرتے رہے ہیں ان کی سابقہ کارکردگی کو دیکھ کر عوام خود بخود گھر گھر جاکر ووٹ مانگ رہے ہیں اس لیے اس وقت مسلم لیگ (ن)کے نامزد امیدوار کا پلڑا بھاری دیکھائی دے رہا ہے ان کے مدمقابل تحریک انصاف کی طرف سے نامزد امیدوار چوہدری نذیر احمد گجر انتخابات میں اور سیاست میں پہلی دفعہ حصہ لے رہے ہیں مگر تحریک انصاف کے سینئر رہنما سردار عاقل عمر چیئرمین چوہدری نذیر احمد گجر اور وائس چیئرمین رانا محمد صادق منج ایڈووکیت کو ساتھ لیکر یوسی 263میں گاؤں گاؤں ،مانگا ہٹھاڑ کی بستیوں میں جاکر عمران خاں کا پیغام پہنچاکر تحریک انصاف کے امیدوار کو ووٹ دینے کی اپیل کرکے مختلف مقامات پر جلسے اور کارنر میٹنگ کر رہے ہیں مگر پھر بھی بتایا گیا ہے کہ اس حلقے میں پی ٹی آئی کو بہت محنت کی ضرورت ہے اس وقت سروے کرنے پر علاقہ کی عوام نے بتایا کہ مقابلہ مسلم لیگ (ن)کے نامزد امیدوار چوہدری محمد یونس گجر اور علاقہ کی معروف سیاسی شخصیات حلقہ سے آزاد امیدوار ملک لیاقت جھیڈو کے درمیان نظر آرہا ہے آزاد امیدوار اور (ن)لیگ کے امیدوار کے درمیان مقابلہ بہت پھنس چکا ہے اس کے علاوہ چوتھا آزاد امیدوار رانا محمد اسلم پہلے بھی سیاست میں حصہ لیکر یونین کونسل سے جنرل کونسلر کا الیکشن لڑ کر کا میاب ہوچکا ہے اور اس دفعہ یوسی263سے چیئرمین کا الیکشن لڑ رہے ہیں دن رات محنت کرکے رانا محمد اسلم بھی دوسرے امیدواروں کے برابر آنے کی کوشیش کررہے ہیں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ رانا محمد اسلم تحریک انصاف کے امیدوار سے زیادہ اچھی پوزیشن اور انتخابی مہم چلارہے ہیں اس کے علاوہ یونین کونسل 262سے مسلم لیگ (ن)کے امیدوار اور تحریک انصاف کے امیدوار کے درمیان الیکشن مہم تیزی ہو چکی ہے اور دونوں امیدواروں میں ون ٹو ون مقابلہ ہو رہا ہے یہ بھی بتاناضروری ہے کہ دونوں جماعتوں کی طرف سے نامزد چیئرمین اسی یونین کونسل سے باری باری ایک ایک دفعہ ناظم منتخب ہوچکے ہیں تحریک انصاف کی طرف سے نامزد امیدوار چیئرمین میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی تقریباً 2002 کے بلدیاتی الیکشن میں ناظم اور چوہدری محمد یونس گجر نائب ناظم بھاری اکثریت سے کامیاب ہوکر اپنے حلقہ کی عوام کے کام کرتے رہے اور اپنے مدمقابل افتخار احمد بھٹی کو بُری طرح ہرایا تھایہ بھی بتانا صروری سمجھتا ہوں کہ دونوں پارٹیوں کے چیئرمین کے امیدوار ایک ہی گاؤں مثالی گاؤں شامکی بھٹیاں کے رہائشی ہیں دونوں کا تعلق بھی بھٹی خاندان سے ہے آپس میں قریبی رشتہ دار بھی ہیں 2007کے بلدیاتی الیکشن میں دوبارہ میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی اور افتخار احمد بھٹی کے درمیان کانٹے دار مقابلہ ہوا جس میں افتخار احمد بھٹی تقریباً300ووٹ زیادہ حاصل کرکے مثالی گاؤں شامکی بھٹیاں یونین کونسل کے ناظم بن گئے اور چوہدری محمد یونس گجر دوبارہ نائب ناظم منتخب ہو گئے اور میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی ہار کر خاموش ہوگئے اور اب ایک بار پھرمسلم لیگ (ن) کی طرف سے چیئرمین کے نامزد امیدوار افتخار احمد بھٹی اور وائس چیئرمین راجہ سہیل اقبال اور تحریک انصاف کی طرف سے نامزدامیدوار چیئرمین میجر (ر)اعجاز محمودبھٹی اور وائس چیئرمین ملک محمد اشرف کھوکھرکے مابین مقابلہ شروع ہو چکا ہے اس وقت تحریک انصاف کے امیدوار چیئرمین میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی اور وائس چیئرمین ملک محمد اشرف کھوکھر کی پوزیشن بہت مضبوط بتائی جا رہی ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی تقریباً2سال سے اپنے حلقہ میں ورک کرکے غریب عوام کے مسائل حل کروانے کی دن رات کوشش کررہے ہیں دوسری طرف میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی کے چاچا وزیر علی بھٹی اسی حلقہ سے سابق ایم این اے بھی رہے چکے ہیں اور وہ میجر (ر)اعجاز محمود بھٹی کیلئے ووٹ مانگ رہے ہیں دوسری طرف تحریک انصاف کے سینئر رہنما سرگرم سردار عاقل عمر دن رات ایک کرکے گاؤں گاؤں گھر گھر میں جاکر عمران خاں کا پیغام دے کر تحریک انصاف کے امیدوار کیلئے ووٹ مانگ رہے ہیں ۔عبدالغفور بھٹی ،محمد یعقوب بھٹی ،عبدالغفار بھٹی،وزیر علی بھٹی نے مقامی پریس کلب کے سرپرست اعلیٰ ملک ممتاز حسین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ (ن)نے جو وعدے کیے تھے ایک وعدہ بھی پورا نہیں کیا وہ تمام وعدے جھوٹے نکلے ہیں اس وجہ سے عوام پریشان ہوکر (ن)لیگ کے امیدوار کو ووٹ نہیں دیں گے بلکہ تحریک انصاف کے امیدوار کی مکمل طور پر حمایت کررہے ہیں سروے کے مطابق یہ بھی بتادینا چاہتا ہوں ایک ہی گاؤں سندر سے دونوں وائس چیئرمین ہیں تحریک انصاف کی طرف سے ملک محمد اشرف کھوکھر اور مسلم لیگ (ن) کی طرف سے راجہ سہیل اقبال ہیں سندر گاؤں میں بھی ملک محمد اشرف کھوکھر راجہ سہیل اقبال سے مضبوط نظر آرہے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -