ہماری معاشی بدحالی کی سب سے بڑی وجہ سودی نظام ہے،ناصر اقبال

ہماری معاشی بدحالی کی سب سے بڑی وجہ سودی نظام ہے،ناصر اقبال

  

لاہور (پ ر) ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدور فاروق چوہان،آصف چٹھہ ، تنویرخان ،میاں زاہدلطیف اورصدر مدینہ منورہ سرفرازخان نیازی ، نائب صدورپنجاب حاجی شیخ آصف ،شیخ طلال امجد اورصدرمنڈی بہاؤالدین مرزاخالدمحمود نے کہا ہے کہ عدالت عظمیٰ نے ایک شراب کی بوتل پرسوموٹولیا تھامگرسودکیخلاف دائردرخواست خارج کردی اسلامی جمہوریہ پاکستان میں سودی نظام کا اہتمام واستحکام اسلام سے متصادم ہے ۔

جبکہ ہماری معاشی بدحالی کی سب سے اہم وجہ ہے عوام کو پارلیمنٹ کی بجائے آزاد عدلیہ سے امیدیں ہیں جہاں انصاف کاراج ہووہاں ظلم کارواج نہیں رہتا ۔ زیادہ ترسرمایہ دارسیاستدان سود ختم کرنے کیلئے سنجیدہ نہیں،عدلیہ اپناآئینی کرداراداکرے۔عدلیہ کاسودکوحرام تسلیم کرناکافی نہیں ،اسلامی ریاست کی حیثیت سے سودی نظام کومنطقی انجام تک پہنچاناہوگا۔پاکستان کے اسلامی تشخص پرسمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا،عدلیہ اسلامی تعلیمات کی روشنی میں فیصلے کرے وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ ہماری ریاست نہیں سیاست ناکام ہوئی ،سرمایہ دارسیاستدانوں کا بنایار یاستی نظام صرف انہیں سپورٹ کرتا ہے اس نظام میں عام لوگ اپنے بنیادی حقو ق اوربنیادی ضروریات سے محروم ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان میں وسائل کی کمی نہیں مگرمخلص اورمدبرقیادت کافقدان ضرور ہے پاکستان میں کسی کونچلی سطح سے قومی سیاست میں ابھرنے نہیں دیاجاتا۔انہوں نے کہا کہ انتخابات میں زیادہ ترپارٹیوں کے ٹکٹ بھاری قیمت پر فروخت ہوتے ہیں کہ زیادہ ترسرمایہ دار چمڑی اوردمڑی بچانے کیلئے سیاست میں آ ئے اوران کی دولت نے سیاست کوپراگندہ کردیا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -