ملک سے خوف کے سائے ختم اور امن کی فضاء بحال ہو رہی ہے ، پرویز رشید

ملک سے خوف کے سائے ختم اور امن کی فضاء بحال ہو رہی ہے ، پرویز رشید

  

 اسلام آباد ( اے این این ) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے کہا ہے کہ ملک سے خوف کے سائے ختم،امن کی فضاء بحال ہو رہی،اب باہر سے بھی لوگ آ سکتے ہیں،پائلٹس کے احتجاج سے کوئی حج فلائٹ متاثر نہیں ہوئی،عام آدمی کو پریشان کر کے کیا ملے گا؟،احتجاج کا کوئی دوسرا طریقہ اختیار کیا جائے،ہمارے کسی وزیر نے سرکاری وسائل سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کئے،جو ایسا کرے گا اس کے خلاف ایکشن ہوگا،جدید ترین میٹرو کو جنگلہ بس کہنے والے خود پیجارو اور مہنگی گاڑیاں استعمال کرتے ہیں،عوام کو معیاری سفری سہولیات ایک آنکھ دیکھ نہیں سکتے،سیاسی مفادات کیلئے قومی منصوبوں کو متازع بنانا زندہ قوموں کے شایان شان نہیں،کسی کے خلاف گندی زبان کا استعمال ہمارا نہیں عمران خان کا شیوہ ہے،مسلم لیگ(ن) کا کلچر تہذیب اور شائستگی پر مبنی ہے،ہم کسی کے خلاف بازاری زبان استعمال نہیں کرتے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے بدھ کو اسلام آباد میں سیاحت کے عالمی دن کی مناسبت سے منعقدہ تقریب سے خطاب اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔وزیراطلاعات نے کہا ہے کہ موجود چیف ایگزیکٹو نے پی ٹی ڈی سی کے حالات بہتر بنانے کی کوشش جس کے نتیجے میں پی ٹی ڈی سی کی آمدنی 2013 کے مقابلے میں 2015میں ضافہ ہوا ، مالی اخراجات کو توازن پیدا کیا ،ماضی میں پیسے بے دردری سے لوٹے جاتے رہے اس روش کو ختم کر دیا ہے ، ملازمین کی تنخواہیں وقت پرملیں اور پی ٹی ڈی سی اپنی مالی مشکلات پر قابو پائے گا ، اداروں کو خراب کردیا جاتا ہے تو اس وقت خاموشی رہی ہے اس پر احتجاج نہیں کیا جاتا جب خراب ادارے دوسر ے لوگوں کی ذمہ داری بن جاتے ہیں توآواز اٹھنا شروع ہوتی ہے یہ آواز اس وقت اٹھنی چاہئے تھی جب پی ٹی ڈی سی میں بغیر میرٹ کے ملازمتیں دی جارہی تھیں ، جب اثاثوں کو بے دریغ لوٹا جارہا تھا ، اس وقت بد قسمتی سے ادارے کے ملازمین نے خود بھی آواز نہیں اٹھائی اب حالات بہتری کی طرف جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کا اپنا ا یک کلچر ہے ،ہم نے تہذیب اور شائستگی کا دامن کبھی ہاتھ سے نہیں چھوڑا، میں نے کوئی ایسا لفظ ن لیگ کے کسی مقرر کے منہ سے نہیں سنا جو تہذیب اور شائستگی کے خلاف ہو ، ہمارے خلاف ہر قسم کی خراب زبان استعمال کی جاتی ہے ، ہمارے خلاف جھوٹ بولا جاتا ہے ، میٹروبس شہریوں کو باعزت اور پرآسائش سفر کرنے کا ذریعہ فراہم کرتی ہے ساری دنیا میں اپنی بسوں کو فخر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ، لندن اپنا تعارف اپنی ڈبل ڈائیکر کے حوالے سے کرتا ہے ، ہمارے ہاں اپوزیشن میٹرو بس کو جنگلہ بس کہتی ہے ، منصوبے کو گالی دیتی ہے ۔ یقیناًاسی طرح کی زبان استعمال نہیں کرنی چاہئے ، عمران خان کو سیاسی ز بان استعمال کرنی چاہئے ، اگر کوئی وزیر اپنی وزارت کے وسائل کسی وقت سیاست میں استعمال کرے تو اس کی کوئی اجازت نہیں دی جا سکتی ، نہ ہمارے وزیر نے وزارت کو سیاست کے لئے استعمال کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پائلٹس کے احتجاج سے عام آدمی متاثر ہورہا ہے اس سے پائلٹس کو کیا ملے گا ،پائلٹس کا احتجاج سے کوئی حج فلائٹ متاثر نہیں ہوئی ، پائلٹس کو احتجاج کا دوسرا طریقہ اختیار کرنا چاہئے تھا ۔ قبل ازیں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پرویز رشید نے کہا کہ ملک میں امن ہے خوف کی فضا ختم ہوتی چلی جارہی ، اب پاکستان میں ایسی فضا موجود ہے کہ دنیا سے لوگ پاکستان آ سکیں ، خود پا کستانی بھی اپنے ملک میں آزادی کے ساتھ گھومیں اور پھریں ، اب ٹورازم کارپوریشن کام شروع ہوتا ہے کہ لوگ اپنے گھروں سے نکلیں تو انہیں اپنے لئے کم پیسوں میں جگہ میسر ہو اس کے لئے ٹور ازم کارپوریشن کی تجاویز مرتب کی گئی ہیں یقیناًان پر عمل کیا جائے گا ، خود پاکستان ٹورازم کارپوریشن کے سٹیٹس کے بارے اٹھارہویں ترمیم کے بعد الجھاؤ کوختم کرنے کے لئے جلد ہی حکومت اقدامات کرے گی

مزید :

صفحہ اول -