سعدرفیق کو اشتہاری قرار دینے کیخلاف درخواست پر پراسکیوشن کوٹرائل کورٹ کی کارروائی پیش کرنے کی ہدایت

سعدرفیق کو اشتہاری قرار دینے کیخلاف درخواست پر پراسکیوشن کوٹرائل کورٹ کی ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے وزیر ریلوے خواجہ سعدرفیق کو انسداد دہشت گردی کی عدالت کی طرف سے اشتہاری قرار دینے کا فیصلہ کالعدم قرار دلوانے کے لئے دائردرخواست پر محکمہ پراسکیوشن کو ہدایت کی ہے کہ اس کیس پر ٹرائل کورٹ میں ہونے والی کارروائی کی رپورٹ پیش کی جائے ۔یہ درخواست محکمہ پراسکیوشن کی طرف سے ہی دائر کی گئی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ خواجہ سعد رفیق سمیت دیگر ملزموں نے 2004ء میں شہباز شریف کی ممکنہ آمد پر لوہاری گیٹ میں جلسہ منعقد کیا تھا جس پر لوہاری گیٹ پولیس نے خواجہ سعد رفیق سمیت دیگر کے خلاف دہشت گردی اور نقص امن پیدا کرنے کی دفعات کے تحت مقدمات درج کئے، مقدمہ کا ٹرائل انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیر التواء ہے ،یہ مقدمہ سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کے لئے درج کیا گیا ،انسداد دہشت گردی کی عدالت نے عدم پیشی پرخواجہ سعد رفیق کو اشتہاری قرار دے رکھا ہے ،سیاسی انتقام کی بنا پر بنائے گئے اس مقدمہ کی سرکار پیروی نہیں کرنا چاہتی اس لئے خواجہ سعد رفیق کو اشتہاری قرار دینے کا فیصلہ کالعدم کیا جائے، فاضل بنچ نے مختصر دلائل سننے کے بعد ڈپٹی پراسکیوٹر کو ہدایت کی ٹرائل کورٹ سے مقدمے کی کارروائی اور ٹرائل سے متعلق رپورٹ 21اکتوبر کو عدالت میں پیش کی جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -