حکومت نے کسان پیکیج پر الیکشن کمیشن کی پابندی کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا

حکومت نے کسان پیکیج پر الیکشن کمیشن کی پابندی کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں ...

  

اسلام آباد(اے این این) وفاقی حکومت نے وزیر اعظم کسان پیکیج پر الیکشن کمیشن کی طرف سے لگائی گئی پابندی کواسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا ہے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ کسان پیکیج کا سندھ، اسلام آبادیاپنجاب کے بلدیاتی انتخابات سے کوئی تعلق نہیں ہے،کسان پیکیج کا مقصد بلدیاتی الیکشن پر اثرانداز ہونا نہیں تھا۔ درخواست میں کہا گیا کہ الیکشن کمیشن نے اختیارات سے تجاوز کرتے ہوئے کسان پیکیج کو معطل کیا جو کہ انتظامی معاملات میں دخل انداز ی ہے الیکشن کمیشن نے حکومتی موقف سنے بغیر کسان پیکج کو معطل کیا۔ درخواست میں یہ بھی کہا گیا کہ الیکشن کمیشن حکومت کو آئینی وقانونی ذمہ داری پوری کرنے سے نہیں روک سکتا، پاکستانی عوام باشعور ہیں وہ کسی پیکج کی وجہ سے اپنے ووٹ نہیں دیں گے۔ وفاق نے عدالت سے استدعا کی کہ الیکشن کمیشن کے فیصلے پر حکمِ امتناع جاری کیاجائے یا الیکشن کمیشن کے فیصلے کو کالعدم قراردیاجائے۔واضح رہے کہ وزیر اعظم نے 341 ارب روپے کے کسان پیکج کا اعلان کیاتھا جس کو بلدیاتی انتخابات پر اثراندازی کاالزام لگا کر الیکشن کمیشن نے معطل کردیا تھا۔کسان پیکج معطل کیے جانے کے بعد وزیر اعظم نے متعلقہ حکام کو کسان پیکج پر عدالت سے رجوع کرنے کی ہدایت کی تھی۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -