اسلحہ سکینڈل میں ملوث سرکاری ٹھیکیدار بلیک لسٹ کرنے پر جواب طلب

اسلحہ سکینڈل میں ملوث سرکاری ٹھیکیدار بلیک لسٹ کرنے پر جواب طلب

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس مظہرعالم میانخیل اور جسٹس مسزارشاد قیصرپرمشتمل دورکنی بنچ نے اسلحہ سکینڈل میں ملوث سرکاری ٹھیکیدار ارشدمجید کوبلیک لسٹ قراردینے کے خلاف دائررٹ پرصوبائی حکومت سے جواب طلب کرتے ہوئے درخواست گذار کو پری کوالیفیکیشن کے عمل میں شامل ہونے کی اجازت دے دی عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے بیرسٹرمدثرامیر کی وساطت سے دائررٹ کی سماعت کی تو اس دوران انہوں نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذار کو اسلحہ سکینڈل میں ملوث ہونے پر بلیک لسٹ قرار دیاگیاہے حالانکہ مذکورہ ٹھیکیدار نے سلطانی گواہ بننے کے ساتھ ساتھ انہوں نے نیب کو رقم بھی واپس کردی ہے مگراس کے باوجود ان کی فرم کو بلیک لسٹ قرار دیاگیاہے جس کے باعث اب وہ کسی سرکاری نیلامی میں حصہ نہیں لے سکتے جو کہ غیرقانونی ہے اس ضمن میں فرنٹیئرکانسٹیبلری کے پاس ممکنہ طورپر مختلف اشیاء سے متعلق نیلامی ہونی ہے مگرکئی ماہ گذرنے کے باوجود تاحال درخواست گذار کو بلیک لسٹ قرار دینے سے متعلق کیس میں سرکارکاجواب داخل نہیں کیاگیاہے لہذاعدالت سے استدعاہے کہ انہیں رٹ کے فیصلے تک پری کوالیفیکیشن کی اجازت دی جائے عدالت نے درخواست گذار کو پری کوالیفیکیشن کی اجازت دے دی ۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -