آئندہ دوسال میں لودھراں میں یونیورسٹی بنادی جائیگی، صدیق بلوچ

آئندہ دوسال میں لودھراں میں یونیورسٹی بنادی جائیگی، صدیق بلوچ

  

لودھراں (نما ئند ہ پا کستا ن)آئند ہ دو سال میں انشاء اللہ لودھراں میں یونیورسٹی قائم کردی جائے گی ان خیالات کا اظہار خان صدیق خان بلوچ ایم این اے نے گذشتہ روز لودھراں یونیورسٹی موومنٹ کے وفد سے سیال ہاؤس میں خصوصی ملاقات کے دوران کیا انہوں نے کہا لودھراں کے عوام کی خدمت (بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

میرا اولین فرض ہے یہاں کے بچوں کے لیے اعلی تعلیم کے مواقع پیدا کرنا میرا مشن ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ لودھراں میں بجلی، گیس اور سڑکوں کی سہولتیں ہمارے ہی دو ر میں فراہم کی گئیں ہیں تعلیمی اداروں کی ضروریات کا خاص خیال رکھا جارہا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ڈاکٹر محمد اشرف ملک کی لودھراں یونیورسٹی کے لیے موومنٹ کا آغاز ایک احسن اقدا م ہے اس سے لودھراں کے نوجوانوں کو نہ صرف تعلیم کے مواقع میسر ہوں گے بلکہ والدین پرتعلیمی اخراجات کا بوجھ بھی کم ہوگا ۔ اس سلسلہ میں جلد ہی میں آئندہ بجٹ سے پہلے وزیر اعلی پنجاب محمد شہبازشریف اور وزیرا عظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سے خصوصی ملاقات کروں گا اور انشاء اللہ آئندہ دوسال میں لودھراں میں یونیورسٹی کے قیام کا خواب پورا ہوجائے گا ۔ لودھراں یونیورسٹی موومنٹ کے وفد کی قیادت پروفیسر ڈاکٹر اشرف ملک کررہے تھے ان کے ہمراہ لودھراں یونیورسٹی موومنٹ کے مرکزی میڈیا ایڈوائزر عمران رفیق ریحان ، کنور علی مرتضی خان چیئرمن این جی او نیٹ ورک،، ملک محمد اکبر۔ مہر غلام مصطفی سیال سماجی و سیاسی رہنما، میڈیا ایڈوائزریونیورسٹی موومنٹ تحصیل لودھراں، حاجی مرید حسین سابق کونسلر ، حاجی محمد افضل سماجی کارکن ،، مہر حبیب اللہ سیال ، ڈاکٹر قاسم رضا موجود تھے۔

صدیق بلوچ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -