امن وامان کی بحالی سے کھربوں کی سرمایہ کاری آرہی ہے:خرم دستگیر

امن وامان کی بحالی سے کھربوں کی سرمایہ کاری آرہی ہے:خرم دستگیر

  

ملتان (خصوصی رپورٹر)وفاقی وزیرتجارت خرم دستگیر نے پاک چائنہ اقتصادی راہداری منصوبے سے تجارت کے مواقع میسر ہونگے اور بہت جلد ٹیڈیپ کے تمام ریفنڈ کلیمز دسمبر2015ء(بقیہ نمبر28صفحہ7پر )

سے قبل ہی ادا کردیئے جائیں گے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے آل پاکستان بیڈشیٹ اینڈ اپ ہولسٹری مینوفیکچرز ایسوسی ایشن (ایپبوما)کے زیر اہتم منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ جاپانی مارکیٹ میں رسائی کی بات چیت شروع ہے وزیراعظم جاپان کادورہ کریں گے تو ان معاملات پربات چیت ہوگی ۔انہوں نے کہاکہ مصنوعات تیارکرنے والے اداروں کو بین الاقوامی سٹینڈرڈز اپنانے پر سبسڈی دی جاتی تھی اب کچھ تبدیلی کے بعد یہ پالیسی دوبارہ لارہے ہیں ۔ہمیں بھارت اوربنگلہ دیش سے بڑے چیلنجز ہیں۔پاکستانی ایکسپورٹرز کو چاہیے کہ وہ عالمی معیار کے مطابق کوالٹی کے سٹینڈرزکواپنائیں۔ایکسپورٹرز سرٹیفکیشن اورسٹینڈرڈز کو بوجھ نہ سمجھیں۔وفاقی وزیر نے کہاکہ کوئی بھی ایسوسی ایشن اداروں کی صلاحیت بڑھانے یانئی ٹیکنالوجی کواپنانے یا ٹریننگ پروجیکٹس کے لیے کام کرنا چاہیے تو ہم اس کی ہرطرح سے بھرپورمدد کریں گے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ امریکی کاٹن کی درآمد کے معاملے پر آپ اپنے مطالبات اور تحفظات کاڈرافٹ تیار کریں۔وزیراعظم کے دورہ امریکہ میں اسے ٹریڈ ایجنڈے میں شامل کریں گے۔انہوں نے کہاکہ ملک میں فوج کی امن وامان کی بحالی کے لیے بے مثال جدوجہد کے بعد اب بیرونی سرمایہ کار ملک میں آرہے ہیں کھربوں کی سرمایہ کاری آرہی ہے حکومت بھی اب دھرنا سیاست کے بعد سے سیاسی انتشار کی کیفیت سے باہر نکل رہی ہے۔اس موقع پر چیئرمین ملتان ڈرائی پورٹ ٹرسٹ احمد چغتائی نے کہاکہ پنجاب ریونیواتھارٹی کے حوالے سے بہت سے مسائل سامنے آرہے ہیں ۔ڈرائی پورٹ کوکسٹم اوردیگر بہت سے مسائل کاسامنا ہے۔معروف صنعتکار خواجہ جلال الدین رومی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بیڈشیٹ ایسوسی ایشن ویلیو ایڈڈ سیکٹر کی نمائندہ ہے جومختلف ٹیکسز خصوصاً امریکہ اور یورپی منڈیوں میں مال بھیجنے پر سخت مسائل کاشکارہے۔ٹیکسٹائل سیکٹر کابحران بہت بڑھ رہاہے۔پیداواری لاگت بڑھنے سے مقابلے کی فضاء سے باہرہورہے ہیں حکومت کوان تمام معاملات پر فوری اورشارٹ فرم اقدامات اٹھانے چاہیں۔قبل ازیں ایپبوما کے چیئرمین سید محمد عاصم شاہ نے سپاسنامہ پیش کرتے ہوئے کہاکہ ایکسپورٹ پرفارمنس کے اضافے پر سبسڈی دیتے وقت روپے کی بجائے یورو کی قیمت کو مدنظررکھاجائے جاپان کے ساتھ یارن کی برآمد پرعائد 25فیصد ڈیوٹی کامعاملہ ترجیحی طوپر حل کرایا جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -