خیبر ایجنسی ،کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس اور ٹرانسپورٹروں کا احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی ،کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس اور ٹرانسپورٹروں کا احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)پاک افغان بارڈر طورخم میں تاجروں ،کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس اور ٹرانسپوٹروں کا این ایل سی حکام کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے کالے جھنڈے اٹھا رکھے تھے اور این ایل سی حکام کے خلاف شدیدنعرہ بازی کی مظاہرین نے طورخم ٹیکسی سٹینڈسے نادرا دفتر تک احتجاجی واک بھی کیا مظاہرین سے خطاب کر تے ہوئے زرقیب شنواری ،قاری نظیم گل ،عابد شنواری ،حاجی تواب شنواری اور یا دواللہ نے کہا کہ طورخم این ایل سی حکام اختیارات سے تجاوز کر رہے ہیں جگہ جگہ روکاوٹیں کھڑی کر دی گئی ہیں جس سے عام لوگوں سمیت تا جروں اور ٹرانسپورٹرز بھی شدید مشکلات سے دو چار ہیں مقررین نے کہا کہ این ایل سی حکام کا جو معاہدہ شنواری خوگا خیل قوم کے ساتھ ہوا ہے این ایل سی حکام ان معاہدے کی خلاف ورزی کر رہی ہیں انہوں نے کہا کہ طورخم نادرا دفتر کے سامنے بئیر یر لگا کر باچہ مینہ میں رہائش پذیر شنواری خوگا خیل قوم کا راستہ بند کر دیاگیا ہے جو سر اسر ظلم اور نا انصافی ہے انہوں نے کہا کہ طورخم پولیٹکل نائب تحصیلدار دفتر جانے کیلئے نادرا دفتر کے راستے مقامی لوگوں سے ایف سی حکام اور این ایل سی حکام پاسپورٹ مانگتے ہیں جو کسی صورت قبول نہیں کیونکہ روزانہ پولیٹکل نائب تحصیلدار دفترکوکئی بار آنا جانا ہو تا ہے اور مقامی لوگوں سے پاسپورٹ مانگانا کہا کا انصاف ہیں انہوں نے کہا کہ جگہ جگہ غیر ضروری رو کاوٹوں سے انکی سبزی اور فروٹ سے بھر ی ہوئی گاڑیاں کئی گھنٹوں تک کھڑے ہوتے ہیں جس سے انکا بہت زیا دہ نقصان ہو رہا ہیں مقررین نے دھمکی دی کہ اگر پیر کے دن تک انکے مطالبات تسلیم نہیں کئے گئے تو پہیہ جام ہڑتال کرکے ایکسپورٹ امپورٹ کو بند کر دینگے جس کی تمام تر ذمہ داری این ایل سی حکام پر عائد ہو گی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...