محکمہ موسمیات کی بارشوں سے متعلق پیشن گوئیاں لیکن دراصل یہ کس حدتک درست ہوتی ہیں؟ تہلکہ خیز انکشاف

محکمہ موسمیات کی بارشوں سے متعلق پیشن گوئیاں لیکن دراصل یہ کس حدتک درست ہوتی ...
محکمہ موسمیات کی بارشوں سے متعلق پیشن گوئیاں لیکن دراصل یہ کس حدتک درست ہوتی ہیں؟ تہلکہ خیز انکشاف

  


اسلام آباد (این این آئی) وزیر اعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے کہاہے محکمہ موسمیات کی پیشگوئی بہت محدود ہے، مکمل صحیح بھی نہیں ہوتی،یہ ادارہ ایک زمانے میں ڈیفنس کے پاس گیا پھر ادھر ہی رہ گیاجس کے باعث کے کوئی زیادہ ترقیاتی کام نہیں ہو سکا،وزیر اعظم نے اسکو وزارت موسمیاتی تبدیلی میں شا مل کرنے کی منظوری دیدی ہے۔ پیر کو سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے موسمیاتی تبدیلی کا اجلاس سینیٹر ستارہ ایاز کی سربراہی میں ہوا، وزیر مملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا مون سون بارشوں کیلئے ارلی وارننگ سٹمز کا جائزہ لے رہے ہیں اس سلسلے میں ہم ایسے ممالک کا دورہ بھی کرینگے جہاں پر یہ کام ہو رہا ہے،ایرا کو ہم نے این ڈی ایم اے میں ضم کر دیا ہے تاکہ بیچ میں کوئی ایشو نہ رہے، یہ ضم ہونے کا عمل جاری ہے، یو این کے تعاون سے قحط زدہ علاقوں میں ترقیا تی کام کروانے جا رہے ہیں۔سینٹر مشاہد حسین سید نے کہا اس سلسلے میں یو این کیساتھ آپ روس اور چائنہ کا بھی وزٹ کریں،روس بھی اس طرح کے واقعات سے بہت متاثر ہو رہا ہے، بیرسٹر سیف اللہ نے کہا اگر ایک ہی وقت میں دو سانحات ہو جائیں تو این ڈی ایم اے دونو ں جگہ نہیں پہنچ سکتاکیونکہ افرادی قوت کی کمی ہے اسکو پورا کیا جائے، لوکل پولیس، اساتذہ اور نوجوانوں کو اس سلسلے میں تربیت فراہم کی جا ئے۔سینیٹر ثمینہ سعید نے کہا زلزلہ زدہ علاقوں میں جانور وں کی مدد لی جائے،جب کوئی واقعہ ہوتا ہے تو انسان دیر سے اورکتا پہلے پہنچ جاتا ہے۔ و ز یرمملکت زرتاج گل نے کہا زلزلوں اور آفات کے وقت متاثرین کی اکثریت کھانے پینے کے تھیلوں کے پیچھے بھاگ رہی ہوتی ہے،ایک جگہ وہ چیزیں پہنچائیں تو دوسری جگہ لوگ شکایت کرتے ہیں کہ ہمیں کچھ نہیں ملا، لوگ یہ نہیں دیکھ رہے زیر زمین پانی کی سطح کتنی کم ہو گئی ہے، پلاسٹک بیگز پر عملدرآمد بہت اچھا ہو رہا ہے،لوگ تعاون کر رہے ہیں، بازاروں میں مہر والا بیگ مل رہا ہے، وہ غیر قانونی ہے اسکی اجا ز ت بھی نہیں، یہ بیگز بیچنا دھوکہ دہی ہے، ایسے لوگوں کیخلاف کارروائی کرینگے،سیکرٹری وزارت موسمیاتی تبدیلی نے کہا مرغزار چڑیا گھر کی حا لت نہیں سدھری، کنٹرول بھی ہمارے ڈائریکٹرسے لیکر واپس پرانے ڈائریکٹر کو دیدیا گیا ہے، زرتاج گل نے کہا ہم چڑیاگھر کی حالت بدل اورمسائل حل کر سکتے ہیں لیکن جب ہمارے پاس مکمل اختیار ہو گا۔اجلاس میں سی ڈی اے اور ایم سی آئی کے عہدیدا ر ان کی عدم شرکت پر ممبران نے برہمی کا اظہار کیا اور کہا سی ڈی اے نے وفاقی دارلحکومت میں صفائی و ستھرائی کے نظام پر رپورٹ جمع کروانا تھی، سی ڈی اے کو سمن بھیجا جائے کہ انہوں نے رپورٹ کیوں نہیں بھجوائی،کمیٹی کے پاس اختیارات ہیں کورٹ کو استعمال کرکے انہیں سمن بھیجے جائیں۔

مزید : ماحولیات /علاقائی /اسلام آباد


loading...