پنجاب میں سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے پر غور کیا جاسکتا ہے، راجہ بشارت 

پنجاب میں سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے پر غور کیا جاسکتا ہے، راجہ بشارت 

  

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر قانون، پارلیمانی امور و سوشل ویلفیئر راجہ بشارت نے کہا ہے کہ سندھ میں کورونا کیسز میں اضافے کے بعد پنجاب میں حفاظتی اقدامات سخت کرنے کی ضرورت ہے اور اگر لوگوں نے احتیاط نہ کی تو ہائی رسک اضلاع اور علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن دوبارہ لگانے پر غور کیا جا سکتا ہے. وہ آج وزیر اعلیٰ ہاؤس میں کابینہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، وزیر صنعت میاں اسلم اقبال،آئی جی پنجاب اور متعلقہ سیکریٹریز بھی اس موقع پر موجود تھے، سیکریٹری پرائمری ہیلتھ نے صوبہ میں کووڈ 19 کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں چند روز سے کورونا کے نئے متاثرین اور اموات کی شرح میں اضافہ نظر آ رہا ہے بالخصوص گوجرانوالہ، ننکانہ اور گجرات کورونا کے لحاظ سے ہائی رسک اضلاع قرار دئیے جا رہے ہیں جن میں نئے متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے، ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پنجاب میں کورونا کی سابقہ لہر سندھ اور کراچی کے بعد آئی تھی جس کے پیش نظر ہمیں زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے، راجہ بشارت نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عوام حالیہ اجتماعات میں ماسک اور سماجی فاصلے کی پابندی کرتے نظر نہیں آرہے لہذا محکمہ صحت پنجاب اس حوالے سے نئے ایس او پیز بنائے اور مقامی ضلعی انتظامیہ ان پر مکمل عملدرآمد کرائے اور میڈیا پر عوام کی آگاہی کیلئے بھر پور تشہیری مہم بھی چلائی جائے۔

راجہ بشارت 

مزید :

صفحہ آخر -