ڈبلیو ایس ایس پی کی پانی ٹیسٹنگ کی پہلی لیبارٹری فعال 

ڈبلیو ایس ایس پی کی پانی ٹیسٹنگ کی پہلی لیبارٹری فعال 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) واٹر اینڈ سینی ٹیشن سروسز پشاور (ڈبلیو ایس ایس پی) کی پانی ٹیسٹنگ کی پہلی پورٹ ایبل لیبارٹری فعال کر لی گئی، تجرباتی بنیادوں پرپانی ٹیسٹنگ اور عملے کی تربیت شروع کر دی گئی ہے، زون ڈی میں لیبارٹری میں پانی ٹیسٹنگ کا کامیاب تجربہ کر لیا گیا ہے، اگلے چند روزمیں عملے کی تربیت مکمل کرنے کے بعد چاروں زونز میں ضرورت کی بنیاد پر پانی کا ٹیسٹ کیا جائے گا تاکہ صارفین کو پینے کا صاف پانی ملے۔ یہ ایک پورٹ ایبل لیبارٹری ہے جسے آسانی کے ساتھ ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کیا جاسکتا ہے، زون اے میں بھی لیبارٹری عنقریب فعال ہوجائے گی۔ ڈبلیو ایس ایس پی صوبے بھر میں پہلی واٹر اینڈ سینی ٹیشن کمپنی بن گئی ہے جس نے اپنے طور پانی ٹیسٹ کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے، ڈبلیو ایس ایس پی اب تک پاکستان کونسل آف ریسرچ ان واٹر ریزروائرز (پی سی آر ڈبلیو آر) میں پانی ٹیسٹ کرتی آرہی ہے اپنے طور ٹیسٹنگ کے آغاز سے سالانہ خاطر خواہ مالی وسائل بچیں گے۔ لیبارٹری میں پانی کے بائیولوجیکل اورفزیکل ٹیسٹ کی سہولت دستیاب ہے، معمول کی ٹیسٹنگ کے علاوہ عوامی شکایات پر بھی متعلقہ علاقوں میں ہی ٹیسٹ کیا جائے گا، بائیولوجیکل ٹیسٹ کے ذریعے پانی میں بیکٹیریا کا پتہ لگایا جاسکتا ہے جبکہ فزیکل ٹیسٹ میں پانی کے رنگ اور بو کے بارے میں معلومات حاصل کی جاتی ہیں۔ لیبارٹری فعال ہونے سے پانی کا فوری اور بروقت ٹیسٹ کرتے ہوئے صارفین کو صاف پانی کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -