کارکردگی بہتر نہ کرنیوالے وائس چانسلر، پرنسپل اور ایم اس کو ہٹانے کا حکم 

کارکردگی بہتر نہ کرنیوالے وائس چانسلر، پرنسپل اور ایم اس کو ہٹانے کا حکم 

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشدنے کارکردگی بہترنہ کرنیوالے وائس چانسلر،پرنسپل اور ایم ایس کو ہٹانے کا حکم دیدیا، صوبائی وزیر صحت نے یہ احکامات محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیراینڈ میڈیکل ایجوکیشن میں اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کئے۔اجلاس میں سیکرٹری صحت نبیل اعوان،ایڈیشنل سیکرٹری سٹاف ڈاکٹر سلمیٰ ودیگرافسران نے شرکت کی۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشدنے اجلاس کے دوران سروسز ہسپتال،جناح ہسپتال اورگنگارام ہسپتال کی کلینیکل آڈٹ رپورٹ جائزہ لیا اورکہا آڈٹ منصوبہ کا دائرہ کاربڑھایاجارہاہے،آڈٹ کا بنیادی مقصد ہسپتالو ں کے حالات بدلناہے۔جناح ہسپتال،سروسز ہسپتال اور گنگارام ہسپتال اگلے تین ما ہ کے اندر کلینیکل آڈ ٹ رپورٹ کے مطابق حالات بدلیں۔سرکاری ہسپتالوں میں صفائی ستھرا ئی کو ہرصورت یقینی بنایاجائے۔کسی بھی سرکاری ہسپتال میں مریض سے بداخلاقی یا علاج میں تاخیر بالکل برداشت نہیں کی جائیگی۔تین ماہ بعدسرکاری ہسپتالوں کے کلینیکل آڈٹ کے مطابق وائس چانسلرز،پرنسپلزاور ایم ایس حضرات کی کارکردگی کا جائز ہ لیاجائیگا، انہیں کارکردگی بہتر کر نے کیلئے تین ماہ کا وقت دیاگیاہے۔ایم ایس حضرات ہرمعاملے کے ذمہ دار ہوئے ہیں، ہسپتالوں میں مریضوں کی شکایات کافوری ازالہ کریں، زیادہ سے زیادہ آسانیاں پیدا، ڈا کٹرز اپنے فرائض عبادت سمجھ کراداکریں۔بعدازاں ایک اور اجلاس کی صدرات کر تے ہوئے وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے ہیلتھ پروفیشنلز کو سپیشل ہیلتھ الاؤ نس،ہیلتھ پروفیشنل الاؤنس،نان پریکٹسنگ الاؤنس اور ٹیچنگ الاؤنس دینے کیلئے حکمت عملی کا جائزہ لیا۔سیکرٹری صحت برسٹر نبیل اعوان نے مختلف الاؤنسز کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔ صوبائی وزیر صحت نے کہا ہیلتھ پروفیشنلز کو کارکردگی کی بنیادپر اضافی الاؤنس دینے کی منظوری ہوچکی ہے، کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے پہلی بار(Key Performance Indicators)بنائے گئے۔وزیراعظم عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب سردارعثمان بزدارہیلتھ پروفیشنلز کومزیدسہولت دیناچاہتے ہیں۔ ہیلتھ پروفیشنلز کو اضافی الاؤنسز دینے کا بنیادی مقصد سرکا ر ی ہسپتالوں میں آنیوالے مریضوں کے علاج معالجہ کو مزید بہترکرناہے۔اضافی الاؤنسز ایڈمنسٹریٹرسے لے کرمیڈیکل افسران تک دیاجائے گا۔محکمہ صحت پنجاب میں ہیلتھ پروف یشنلز کی ریکارڈ بھرتی کا کریڈٹ وزیراعظم پاکستان اور وزیر اعلی پنجاب کو جاتا ہے۔ کمیٹی کا اجلاس دوبارہ بلاکراضافی الاؤنسزکے فیصلے کی عملدرآمدکا جائزہ لیاجائیگا۔

یاسمین راشد حکم 

مزید :

صفحہ آخر -