111 سال قید کی سزا پانے والے قتل کے ملزمان 4 سال بعد رہا 

  111 سال قید کی سزا پانے والے قتل کے ملزمان 4 سال بعد رہا 

  

پشاور (نیوزرپورٹر)پشاو رہائی کورٹ کے جسٹس روح آمین او رجسٹس سید ارشدعلی خان کے  ڈبل بینچ نے قتل کے جرم میں ملوث تین ملزمان کو 111سال قیدکی سزاپانے والے ملزمانکو چار سال بعد جیل  سے رہائی دینے کے احکامات جاری کردئیے استغاثہ کے مطابق ملزم شاہ زیب  تصدق اور مدثرسکنہ ابراہمزئی پرالزام تھا کہ انہوں نے تھا نہ ہنگو کی حدود میں 17-10-17کو حثیب نامی سکول ماسٹرکو قتل کرکے نعش کو بوری میں بند کرکے ویرانے میں پھینک دی تھی ا س جرم میں تینوں ملزمان کو ماڈل کورٹ ہنگو  نے مجموعی طورپر111سال کی قید کاحکم سنایاتھا لیکن ملزمان اپنے سزا کے خلاف ہائی کورٹ  پشاور میں اپیل دائر کی تھی اس کیس کی پیروی شبیر حسین گیگیانی ایڈوکیٹ کررہے تھے عدالت نے سماعت کے دوران وکیلوں کے دلائل مکمل ہونے پر تینوں ملزمان کو چارسال جیل میں گزارنے کے بعد رہائی کے احکامات جاری کردئیے  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -