فی ایکڑ پیداووار بڑھانے کیلئے  کاشتکاروں کو معیاری بیج فراہم کیا  جائے‘ صوبائی وزیر حسین جہانیاں گردیزی

      فی ایکڑ پیداووار بڑھانے کیلئے  کاشتکاروں کو معیاری بیج فراہم کیا  ...

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر) زرعی شعبہ کی ترقی کے لئے تمام اسٹیک ہولڈرز کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ صوبہ میں فی ایکڑ زیادہ پیداوار کے حصول کے لئے کاشتکاروں کو معیاری بیج کی(بقیہ نمبر38صفحہ 6پر)

 فراہمی ناگزیر ہے تاکہ اُن کی پیداواری لاگت میں کمی ہوسکے۔ جس کیلئے پبلک و پرائیویٹ سیکٹر کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی نے لاہور میں نجی شعبے کے پروڈکشن ہاؤس میں جاری زرعی ریسرچ و ڈویلپمنٹ کی سرگرمیوں کا جائزہ لینے کے موقع پر کیا۔ وزیر زراعت پنجاب نے مزید کہا کہ جاری موسمیاتی تبدیلیوں کے تناظر میں فصلوں کی ایسی نئی اقسام کی دریافت وقت کی اہم ضرورت ہے جو زیادہ گرمی و سردی برداشت کر نے کے علاوہ فی ایکڑ زیادہ پیداوار کی حامل ہوں۔وزیر زراعت پنجاب نے مزید کہا کہ نجی شعبے کا زرعی تحقیق اور معیاری زرعی مداخل کی تیاری میں کردار خوش آئند ہے جس کی موجودہ حکومت ہر سطح پر حوصلہ افزائی کرے گی۔زرعی پیداوار بڑھانے کے لئے فصلوں کی جدید پیداواری ٹیکنالوجی کو متعارف کروانا ہوگااور کاشتکاروں کوتربیت و فنی راہنمائی فراہم کرنا ہوگی۔وزیر زراعت پنجاب نے فصلات کے معیاری اور بیماریوں سے پاک بیج کی تیاری کو سب سے بڑا چیلنج قرار دیا۔اس سے قبل وزیر زراعت پنجاب نے لاہور میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت بھی کی اورو زیر اعظم کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت جاری منصوبوں پر عمل درآمد تیز کرنے اور اہداف کی تکمیل کی ہدایت کی تاکہ کاشتکاروں کی پیداوار ی لاگت میں کمی اور آمدن میں اضافہ یقینی بنایا جاسکے۔اس کے علاوہ  زمین کی ذرخیزی میں کمی،موسمیاتی تبدیلیوں،معیاری بیج کی تیاری اورکپاس و دالوں کی پیداوار میں کمی کے مسائل کو حل کرنے کے لیے پلان کو جلد پیش کرنے کی ہدایت بھی کی۔

حسین جہانیاں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -