واپڈا نجکاری کیخلاف شہرشہر مظاہرے، ریلیاں، دھرنے، دفاتر کو تالے 

واپڈا نجکاری کیخلاف شہرشہر مظاہرے، ریلیاں، دھرنے، دفاتر کو تالے 

  

 ملتان+ مظفر گڑھ + وہوا + بہاولپور + میاں چنوں + محسن وال + عبدالحکیم + محسن وال + نیوز رپورٹر + نامہ نگار + نمائندہ پاکستان + ڈسٹرکٹ رپورٹر + سٹی رپورٹر) آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک ورکرز یونین سی بی اے کے زیراہتمام محکمہ بجلی واپڈا کے ہزاروں محنت کشوں نے ملک بھر کے تمام بڑے شہروں سمیت ملتان، فیصل آباد، گوجرانوالہ، راولپنڈی، پشاور، کوئٹہ، حیدرا?باد میں ریلیاں اور جلوس نکال کر اپنے مطالبات کے حق میں یوم احتجاج منایا، ملتان میں محکمہ بجلی واپڈا کے سینکڑوں کارکنوں نے قومی پرچم اور اپنے مطالبات کے حق میں بینرز اٹھارکھے تھے۔(بقیہ نمبر43صفحہ 6پر)

 میپکو ہیڈ کوارٹر کے سامنے منظم ریلی منعقد کرتے ہوئے حکومت سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ ملک میں ضروریات زندگی کی اشیا میں کمر توڑ مہنگائی کو کنٹرول کرے۔ 2018 میں چینی کی قیمت مبلغ 55روپے تھی جو اب 105روپے فی کلو فروخت ہورہی ہے آٹا مبلغ 35روپے سے 70روپے فی کلو اسی طرح زندگی بچانے والی ادویات 264فیصد مہنگی کردی گئی ہیں۔ دیگر ضروریات زندگی کی اشیا میں اسی طرح بے پناہ اضافہ ہوگیا ہے اس بنا پر ملک کے غریب عوام اور محنت کشوں کا جینا مشکل ہوگیا ہے۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ریجنل چیئرمین میپکو چوہدری غلام رسول گجر اور چوہدری محمد خالد نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ضروریات زندگی کی بنیادی اشیا کی قیمتوں کو کم کرکے ایک عرصہ تک کرے سرکاری و نیم سرکاری، محکم واپڈا، ریلوے، صنعتی، تجارتی، بینکوں، میڈیا کے ملازمین کی تنخواہوں اور پنشنوں میں کم از کم 30فیصد اضافہ کرے جوکہ اس سال وفاقی بجٹ میں نہیں کیا گیا۔ انہوں نے وزیراعظم پاکستان سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ قومی مفاد میں بجلی کے تھرمل پاور ہاؤسز اور ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کو قومی مفاد میں آئی ایم ایف کے دباؤ پر مجوزہ نجکاری کو روکیں۔جلسہ سیچوہدری محمد یونس'سجاد بلوچ'اکرام الحق علوی'ملک تنویر'شکیل بلوچ' رانا زاہد جاوید'چوہدری راشد یامین'طارق صدیقی'چوہدری شفاقت اور مقررین نے مطالبہ کیا کہ محکمہ بجلی میں سالہا سال سے  فیلڈ سٹاف بمعہ لائن سٹاف کی خالی اسامیوں پرجلد از جلد  بھرتی کی جائے۔تجربہ کار ملازمین تیزی سے ریٹائر یو رہے ہیں۔گزشتہ ملی سال کے دوران کام کی زیادتی کی وجہ سے 53 لائن مین بجلی کا کر نٹ لگنے کی وجہ سے شہید یو گئے۔یوم احتجاج کے موقع پر شہید ملامین کے لیے دعائے مغفرت کی گئیاور کشمیری عوام پر ظلم و ستم کی شدید مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا گیاکہ مسلمانوں کی نسل کشی بند کروائی جائے اور آزادانہ رائے شماری کر وائی جائے۔واپڈا میں قومی سطح پر جلد از جلد ریفرنڈم کروائے تاکہ محنت کشوں کو ان کاجمہوری حق دے کر  نمائندہ ٹریڈ یونین منتخب کرنے کا بنیادی حق مل سکے۔ ادھر میپکو سرکل آفس مظفرگڑھ واپڈا نجکاری کے خلاف احتجاجی مظاہرہ اور بطور احتجاج سرکل آفس میں دھرنا دیا گیا جس میں سرکل کے تمام عہدیدران اور ملازمین کی کثیرتعداد میں شرکت کی مظاہرین سے زونل چیئرمین ملک الطاف حسین نے خطاب کرتے ہوئے حکومت کی نجکاری پالیس کی زبردست مخالفت کی اور کہاکہ یونین کبھی بھی کسی صورت پر نجکاری نہیں ہونے دینگے آئی ایم ایف کے مطالبہ پر ہورہا ہے جس سے ملک غربت میں انتہائی بیروزگاری کا باعث بنے گا اور ملازمین کا مستقبل بھی غیرمحفوظ ہوجائے گا، اس موقع پر زونل سیکرٹری میاں افتخار، جاوید سندیلہ وائس چیئرمین،اکرم خان گوپانگ زونل چیئرمین،اشتیاق بلوچ،میاں فاروق، ظفراعوان، میاں فاروق،شاہدنواز،ظفر زمان، سیدذیشان شاہ ودیگر نے عہدیدروں نے خطاب کیا۔ واپڈا کی نجکاری ملازمین اور ان کے بچوں کا معاشی قتل ہے جسے کسی صورت برداشت نہیں کیا جاسکتا یہ بات آل پاکستان ہائیڈرویونین میپکو سب ڈویژن وہوا کے رہنماء عبدالقیوم پٹھان، نیاز احمد کھتران نے واپڈا کی نجکاری کے خلاف منعقدہ احتجاجی مظاہرہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ محکمہ واپڈا کے لاکھوں اہلکار اپنی جان جوکھوں میں ڈال کر عوام کے گھروں کو روشن کیے ہوئے ہیں کئی اہلکار دوران ڈیوٹی اپنی جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب محکمہ واپڈا کی نجکاری کا فیصلہ انتہائی ظالمانہ اقدام ہے جس سے اس محکمہ سے وابستہ لاکھوں گھروں کا چولہا بجھ جائے گا انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے اس فیصلہ کو فوری واپس لے احتجاج میں عبدالقیوم پٹھان، خالد سعید ہیڈکلرک، نیاز احمد کھتران ڈویژنل یوتھ سیکرٹری ہائیڈرو یونین،عبدالعزیز لائن سپرنٹنڈنٹ،  محمد ارشد بلوچ لائن مین ون، سجاد احمد، حبیب اللہ باجھہ، حیات اللہ باجھہ، محمد ارشد اعوان، محمد سلیم باجھہ، محمد جمیل ایس ڈی سی، اسامہ لیاقت، خالد نسیم، محمد زبیر قیصرانی، فیاض الرحمٰن، رحمت اللہ، مدثر امین نے شرکت کی۔ آل پاکستان واپڈاہائیڈوالیکٹراک ورکز یونین نے احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں سینکڑوں ملازمین شریک تھے انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ فوری طورپر ان کے جائز مطالبات پورے کیے جائیں بصورت دیگروہ واپڈادفاتر کی تالہ بندی کرنے کے علاوہ احتجاجی مظاہرے اورریلیاں نکالیں گے اوربھوک ہڑتالی کیمپ بھی لگائیں گے۔ آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو ورکرز یونین کے زیر اہتمام میاں چنوں میں واپڈا ملازمین کی جانب سے شدید احتجاج ریکارڈ کروایا گیا،ڈویژنل چیئرمین چوہدری شرافت ندیم اور وائس چیئرمین چوہدری اسماعیل،سیکرٹری رانا محمد عمران اور جوائنٹ سیکرٹری منیر گجر ود یگر نے بتایا کہ محکمے کی نجی کاری سے نا صرف محکمہ کا نقصان ہے بلکہ ملازمین اور صارفین کیلئے بھی پریشانی ہوسکتی ہے،مظاہرین کا کہنا تھاکہ فیلڈ ورکرز کیلئے سہولیات کی عدم فراہمی کی وجہ سے کئی حادثات ہوتے ہیں اور کئی ملازمین جان کی بازی ہا ر چکے ہیں،مظاہرین کا مزید کہنا تھا کہ سٹاف کی کمی کے باوجود عوامی شکایات ہماری تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے اور ہمارے مطالبات پورے کئے جائیں۔ ملک بھر کی طرح واپڈاسب ڈویژن آفس عبدالحکیم کے ملازمین نے بھی نجکاری کے خلاف آفس کو تالے لگا کراحتجاجا ًکام چھوڑ ہڑتال کی۔اس سلسلہ میں عبدالحکیم سے ملازمین کے قافلے نے سرکل چیئرمین چودھری منیراحمد گجر کی قیادت میں شیخ غضنفر حسین،ملک محمد بلال،منیب عثمان،محمد عمران،ایل ایس منیروصلی،مطلوب احمد،محمد رفیق،ندیم ارشد،لیاقت جنجوعہ،نزاکت جنجوعہ،ثناء اللہ و دیگر سٹاف ممبران کے ہمراہ واپڈا آفس میاں چنوں میں لگائے گئے احتجاجی کیمپ میں شرکت کی۔واپڈا ملازمین کا مطالبہ تھا کہ واپڈا کی نجکاری کے فیصلے کوفوری واپس لیا جائے،حالیہ مہنگائی کے تناسب سے تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے،کنٹریکٹ ملازمین اور ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کیا جائے بصورت دیگر احتجاج کا سلسلہ جاری رہے گا۔احتجاجی کیمپ کے شرکاء کا کہنا تھا کہ اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں روزانہ کی بنیاد پر اضافہ کیا جاتا ہے جبکہ تنخواہوں میں سال بعدمعمولی اضافہ ہوتا ہے۔دریں اثناء واپڈا ملازمین کی ہڑتال کے سبب دن بھر سائل آفس کے چکر لگاتے رہے بجلی بلوں کی آخری تاریک ہونے کے ناطے سے بل جات کی درستگی کروانے والے سائل شدید پریشان نظر آئے۔ 

جلسے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -