رنگ پور میں مقابلہ‘ آر پی او ڈیرہ  کا واقعہ پر نوٹس‘ ملزم گرفتار کرنیکا حکم

  رنگ پور میں مقابلہ‘ آر پی او ڈیرہ  کا واقعہ پر نوٹس‘ ملزم گرفتار کرنیکا ...

  

ڈیرہ غازی خان (ڈسٹرکٹ بیورورپورٹ‘ سٹی رپورٹر) آر پی او فیصل رانا(بقیہ نمبر2صفحہ 6پر)

 نے ضلع مظفر گڑھ کے تھانہ رنگ پور کے علاقہ میں رہزنی کے مقدمہ کے ملزمان کی فائرنگ سے چوکی انچارج اے ایس آئی ملازم حسین کی شہادت کے واقعہ کا سخت نوٹس لے کر ڈی پی اوسے رپورٹ طلب کر لی،واقعہ میں ملزمان کی فائرنگ سے ان کا ایک ساتھی بھی ہلاک ہوا، تفصیلات کے مطابق ضلع مظفر گڑھ کے تھانہ رنگ پور کے علاقہ میں رہزنی کے مقدمہ کے ملزمان کی طرف سے پولیس پر کی جانے والی فائرنگ کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او مظفر گڑھ سے رپورٹ طلب کر لی،ڈی پی او حسن اقبال نے آر پی او کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ تھانہ رنگ پور کی چوکی امیر پور کنکا کا انچارج اے ایس آئی ملازم حسین موضع پیر دوانہ راجن میں رہزنی کے مقدمہ کے ملزمان کی گرفتاری کے لئے پولیس پارٹی کے ہمراہ گیا،ملزمان نے پولیس کو دیکھتے ہی اندھا دھند فائرنگ کر دی،گولیاں لگنے سے اے ایس آئی ملازم حسین شدید زخمی ہو گیا جسے نشتر ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہو گیا،ملزمان کی فائرنگ سے ان کا ایک ساتھی بھی شدید زخمی ہوا جو ہسپتال لے جاتے ہوئے ہلاک ہو گیا جس کی شناخت غلام شبیر کے نام سے ہوئی،ملزمان وقوعہ کے بعد فرار ہو گئے،آر پی او فیصل رانا نے شہید اے ایس آئی ملازم حسین کو شاندار الفاظ میں زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملازم حسین شہید نے قانونی کی حکمرانی،عوام کے جان ومال کے تحفظ اور سماج دشمن و قانون شکن عناصر کی گرفتاری کے لئے جس فرض شناسی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی جان کا نذرانہ پیش کیا اس سے وہ شہادت کے عظیم مرتبے پر فائز ہو گیا،اس نے ثابت کیا کہ وطن عزیز کی محبت ایمان کا حصہ ہے،مادر وطن کی سرزمین کو سماج دشمنوں اور قانون شکنوں سے پاک کرنے کے لئے اگر جان بھی دینا پڑے تو دی جا سکتی ہے،آر پی او نے کہا کہ ملازم حسین شہید جیسے با ہمت اور استقامت کے کوہ گراں پولیس افسران و اہلکار محکمہ کی بہادری کی علامت ہیں یہی لوگ محکمہ کے ماتھے کا جھو مر ہیں جو جان کا نذرانہ پیش کرتے ہوئے بھی کہتے ہیں کہ ”جان دی دی اسی کی تھی،حق تو یہ ہے کہ حق ادا نہ ہوا“،آر پی او نے کہا کہ میں شہید ملازم حسین کی فیملی کو سلیوٹ کرتا ہوں پورا محکمہ شہید کے لواحقین میں شامل ہے،اگر چہ شہید ملازم حسین کی کمی تو محکمہ ہر وقت محسوس کرے گا لیکن سماج دشمنوں اور قانون شکنوں پر واضح ہو گیا ہے کہ انہیں کسی بھی صورت قانون شکنی نہیں کرنے دی جائے گی،آر پی او نے ڈی پی او مظفر گڑھ کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ ملازم حسین کی شہید اور اپنے ساتھی کو ہلاک کرنے والے ملزمان کو فوری گرفتار کیا جائے،پولیس سمیت قانون نافذ کرنے والے اداروں پر فائرنگ دہشت گردی ہے،ایسے ملزمان دہشت گرد ہیں جن کی فوری گرفتاری انتہائی ضروری ہے،ڈی پی او اپنی نگرانی میں جدید سائنسی ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بنائیں۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -