سرکاری اراضی کی گرین بیلٹس پر قائم قبضہ، تجاوزات فوری ختم کرنیکا فیصلہ 

  سرکاری اراضی کی گرین بیلٹس پر قائم قبضہ، تجاوزات فوری ختم کرنیکا فیصلہ 

  

 رحیم یار خان (بیورو رپورٹ)سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات کی روشنی میں ضلع بھر سے کمرشل و رہائشی کالونیوں میں سرکاری اراضی کی گرین بیلٹس پر قائم قبضہ و تجاوزات فوری ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا‘ ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی زیر صدارت سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر عملدرآمد کرنے کے لئے اجلاس منعقد ہوا جس میں تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز، بلدیاتی اداروں کے چیف افسران، محکمہ ہاؤسنگ اور دیگر متعلقہ اداروں کے افسران نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے تمام اسسٹنٹ کمشنرز، بلدیاتی اداروں، محکمہ ہاؤسنگ (بقیہ نمبر10صفحہ 6پر)

سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسر ا ن کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ وہ تین یوم میں اپنی گرین بیلٹس کے لئے مختص ار اضی کی مکمل نشاندہی کریں اور اگر اس ار اضی پر کسی بھی قسم کی تجاوزات یا قبضہ ہے تو قابضین کو نوٹس جاری کریں۔چار یوم کے بعد تمام ادارے اپنی سر کار ی ار اضی قابضین سے واگزار کرانے کے لئے بھر پور کارروائی کرنے کے مجاز ہوں گے۔انہوں نے ہدایت کی کہ سرکاری اراضی پر قبضہ کرنے والوں کو بازاروں سمیت مختلف شاہرات و گلیوں میں تجاوز کرکے تعمیر کئے گئے گاڑیوں کے گیراج، جنگلوں اور دیگر غیر قانونی تعمیرات کو از خود اندر چار یوم مسمارکرنے کے احکامات دیئے جائیں اور خبردار کیاجائے کہ آئندہ سٹرکوں، گلیوں، فٹ پاتھوں و دیگر سرکاری جگہ کو روک کر غیر قانونی تعمیرات سے باز رہیں بصورت دیگر قصور وار اپنے نقصان کے خود ذمہ دار ہونگے اور مزید قانون شکنی کی صورت میں انہیں مقدمات کا سامنا کرنا پڑے گا۔انہوں نے ہدایت کی کہ چاروں تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز اپنی نگرانی میں تمام محکموں کی ملکیہ سرکاری اراضی کی رپورٹ مرتب کرکے ضلعی ہیڈ کواٹر کو ارسال کریں اگر کسی تحصیل میں گرین بیلٹس کے لئے مختص سرکاری اراضی پر کوئی قبضہ نہیں تو متعلقہ تحصیل کا اسسٹنٹ کمشنر سرٹیفکیٹ جمع کرائے۔اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر، اسسٹنٹ کمشنر سرمد علی بھاگت، محمد یوسف چھینہ، عامر افتخار، ارشد وٹو سمیت دیگر موجو دتھے۔

قبضہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -