پی سی بی کن فاسٹ باﺅلرز پر مشتمل کھیپ تیار کرنا چاہتا ہے؟ ہائی پرفارمنس سینٹر کے باﺅلنگ کوچ نے بتا دیا

پی سی بی کن فاسٹ باﺅلرز پر مشتمل کھیپ تیار کرنا چاہتا ہے؟ ہائی پرفارمنس ...
پی سی بی کن فاسٹ باﺅلرز پر مشتمل کھیپ تیار کرنا چاہتا ہے؟ ہائی پرفارمنس سینٹر کے باﺅلنگ کوچ نے بتا دیا
کیپشن:    سورس:   Twitter

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) ہائی پرفارمنس سینٹر کے باﺅلنگ کوچ محمد زاہد رفتار سے زیادہ لائن و لینتھ کی اہمیت کے قائل ہیں جن کا کہنا ہے کہ ہم 90 میل کی رفتار سے باﺅلنگ کرنے والے نوجوانوں کی ایک کھیپ تیار کرنا چاہتے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق نجی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں محمد زاہد نے کہا کہ شعبہ فاسٹ باﺅلنگ کو مضبوط بنانے کیلئے جامع پلان تیار کرلیا ہے جس کے تحت کام کا بوجھ تقسیم کرکے باﺅلرز کو انجریز سے بھی بچایا جا سکے گا جبکہ کوشش ہوگی کہ 90 میل کی رفتار سے باﺅلنگ کرنے والے نوجوانوں کی ایک کھیپ تیار کی جائے جومختلف فارمیٹ میں پاکستان کیلئے فائدہ مندثابت ہو، ڈومیسٹک کرکٹ میں کافی اچھے باﺅلرز دکھائی دئیے ہیں جنہیں ہائی پرفارمنس سینٹر بلاکر کام کیا جائے گا۔

محمد زاہد نے کہا کہ وسیم اکرم، وقار یونس اور شعیب اختر جیسا باﺅلر بننے میں وقت لگتا ہے اور کامیابی کیلئے رفتار سے زیادہ لائن و لینتھ پر باﺅلنگ ضروری ہے،اس وقت سب سے موثر باﺅلر محمدعباس، آصف کی طرح کم رفتار کے باوجود وکٹ لینے کا ہنر جانتے ہیں۔ میری خواہش ہے کہ عباس جیسے مزید باﺅلرز سامنے لائے جائیں جو تینوں فارمیٹ میں کارگر ثابت ہوں۔ 

ان کا کہنا تھا کہ باﺅلنگ کی رفتار بڑھانے کیلئے نسیم شاہ، شاہین شاہ آفریدی اور دیگر نوجوان باﺅلرز کو اپنی فٹنس بہتر بنانے پر توجہ دینا ہوگی، ٹی 20 کرکٹ کی بہتات میں بیٹسمینوں کے پاس کافی آپشنز موجود ہیں جبکہ بہتر کارکردگی کیلئے فاسٹ باﺅلرز کو بھی مختلف ورائٹیز متعارف کرانا ہوں گی۔ 

مزید :

کھیل -