سوشل میڈیا کمپنیوں کے 9 ماہ کے اندر پاکستان میں دفتر، پی ٹی اے کے پاس رجسٹریشن لازم قرار، دوسروں کی نقل اتارنے پر پابندی، سوشل میڈیا کے نئے رولز منظور

سوشل میڈیا کمپنیوں کے 9 ماہ کے اندر پاکستان میں دفتر، پی ٹی اے کے پاس رجسٹریشن ...
سوشل میڈیا کمپنیوں کے 9 ماہ کے اندر پاکستان میں دفتر، پی ٹی اے کے پاس رجسٹریشن لازم قرار، دوسروں کی نقل اتارنے پر پابندی، سوشل میڈیا کے نئے رولز منظور
کیپشن:   وفاقی کابینہ نے پی ٹی اے کے تیار کردہ سوشل میڈیا رولز کی منظوری دے دی سورس:   Wikimedia Commons

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں سوشل میڈیا کمپنیز کو ’لگام‘ ڈالنے کی تیاریاں مکمل کرلی گئیں۔ کابینہ نے  پی ٹی اے کے تیار کردہ نئے رولز کی منظوری دے دی۔

نجی ٹی وی سماء کے مطابق پی ٹی اے کی سفارشات کی منظوری کے بارے میں وزارت آئی ٹی آئندہ چند روز میں نوٹیفکیشن جاری کرے گی۔ نئے رولز کے مطابق دفاع پاکستان، اخلاق باختہ ، فحش ، مذہب ، توہین رسالت ، حکومتی احکامات کے خلاف مواد قابل سزا جرم تصور ہوگا، پبلک آرڈر کے بارے میں غلط معلومات بھی جرم تصور ہوں گی۔

کسی دوسرے شخص سے متعلق منفی رجحان پیدا کرنے یا دوسرے شخص کی نقل اتارنے والے مواد پر پابندی ہوگی۔ انتہا پسندی، دہشتگردی، تشدد کی لائیو سٹریمنگ پر پابندی ہوگی، بچوں کو متاثر کرنے والے مواد پر بھی پابندی ہوگی۔ سوشل میڈیا کمپنیاں ملک کے وقار ، سلامتی و دفاع کے خلاف مواد کو ہٹانے کی پابند ہوں گی۔

نئے رولز کے مطابق ایسی تمام کمپنیاں جن کے صارفین کی تعداد 5 لاکھ سے زائد ہے وہ خود کو پی ٹی اے کے پاس رجسٹرڈ کرانے کی پابند ہوں گی۔ یوٹیوب، فیس بک، ٹک ٹاک، ٹوئٹر اور گوگل پلس سمیت سوشل میڈیا کمپنیاں ان نئے رولز کو ماننے اور 9 ماہ کے اندر پاکستان میں دفاتر قائم کرنے کی پابند ہوں گی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -سائنس اور ٹیکنالوجی -