انٹرا کورٹ اپیلوں پرشوگر ملوں کو چینی کی ذخیرہ اندوزی سے روکنے کاحکم 

  انٹرا کورٹ اپیلوں پرشوگر ملوں کو چینی کی ذخیرہ اندوزی سے روکنے کاحکم 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے چینی کی سرکاری قیمتیں مقرر کرنے کیخلاف دائرانٹرا کورٹ اپیلوں پرشوگر ملوں کو چینی کی ذخیرہ اندوزی سے روکنے کاحکم دے دیاتاہم متعلقہ ڈپٹی کمشرز کو بھی ہدایت کی ہے کہ شوگر ملوں سے چینی کا سٹاک اٹھانے کیلئے زورزبردستی نہ کی جائے عدالت نے شوگر ملزمالکان کی اپیلوں پر 13اکتوبر کو فریقین کے وکلاء کو بحث کے لئے بھی طلب کرلیا مسٹرجسٹس شاہد کریم پر مشتمل ڈویژن بنچ نے شوگر ملزمالکان کی انٹرا کورٹ اپیلوں پر سماعت کی،دوران سماعت وفاقی حکومت کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل اسد علی باجوہ نے فاضل بنچ کے روبر پیش ہوکر تبایا کہ حکومتی ادارے شوگر ملوں سے کبھی غیر قانونی چینی کاسٹاک نہیں اٹھاتے،شوگر ملوں سے سپلائی چین مینجمنٹ آرڈر کے تحت چینی اٹھائی جاتی ہے، فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کوئی حکم قانون کے خلاف پاس نہیں کرتی ادارے قانون کے مطابق کارواِئی کریں شوگرملز مالکان کے وکیل نے موقف اختیارکیا کہ سنگل بنچ نے چینی کی قیمت مقرر کرنے کے خلاف درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ متعلقہ فورم کو بھجوا یا،سنگل بنچ نے اپیلٹ کمیٹی کو شوگر ملز کی درخواستوں پر فریقین کو سن کر فیصلے کا حکم دیا، سنگل بنچ کا چینی کی قیمتوں کے متعلق درخواستیں نمٹانے کا فیصلہ قانون کے مطابق درست نہیں،عدالت سے استدعاہے کہ سنگل بنچ چینی کی قیمتیں مقرر کرنے کے خلاف درخواستیں نمٹانے کا فیصلہ کالعدم قرار دیاجائے اورکیس کے حتمی فیصلے تک سنگل بنچ کے فیصلے کو معطل کیا جائے۔

مزید :

علاقائی -