ای سی سی اوورسیز پاکستانیوں کیلئے نیشنل ریمیٹنس لائیلٹی پروگرام اور متعدد مراعات منظور

  ای سی سی اوورسیز پاکستانیوں کیلئے نیشنل ریمیٹنس لائیلٹی پروگرام اور متعدد ...

  

          اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں)کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کیلئے نیشنل ریمیٹنس لائیلٹی پروگرام کے تحت مراعات، یوٹیلیٹی سٹورز کارپو ر یشن کیلئے دولاکھ اسی ہزارٹن گندم کی فراہمی کی بھی منظوریاں دیدیں، تفصیلات کے مطابق جمعرات کو ای سی سی کا اجلاس وزیر خزانہ شوکت ترین کی صدارت میں اسلام آباد میں ہوا، وزارت خزانہ کی جانب سے اوورسیز پاکستا نیو ں کیلئے مراعات کی سمری پیش کی گئی،جس کے تحت اوورسیز پاکستانیوں کیلئے نیشنل ریمیٹنس لائیلٹی پروگرام کو سوہنی دھرتی پروگرام کے طور پر پیش کیا جائیگا،مستقل طور پر وطن واپس آنیوالوں کو کیش ریڈمپشن فراہم کی جائیگی،جبکہ اوورسیز پاکستانی پی آئی اے ٹکٹ، موبائل فون پرڈیوٹی میں رعایت کی سہولت سے فائد ہ اٹھاسکیں گے، اجلاس میں غذائی تحفظ او ر تحقیق کی وزارت کی سمری پر ای سی سی نے اگست اور ستمبر میں کپاس کے بیج کی قیمتوں کا جائزہ لیا اور مقامی سطح پر قیمتوں پر اطمینان کا ا ظہا ر کر تے ہوئے کہا کاشتکار وں کو حکومت کی مقرر کردہ قیمت سے زیادہ قیمت وصول ہو رہی ہے، ای سی سی نے یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن کیلئے دولاکھ اسی ہزارٹن گندم کی فراہمی جار ی رکھنے کی منظوری دی،جس میں سے نوے ہزار ٹن گندم پہلے ہی فراہم کی جاچکی ہے جبکہ باقی ایک لاکھ نوے ہزار ٹن جلدفراہم کی جائیگی۔ اجلاس میں آزاد جموں و کشمیر کیلئے رواں مالی سا ل کے دوران 3لاکھ ٹن گندم کی فراہمی کی فراہمی جاری رکھنے کی منظوری دی،جس میں سے غذائی تحفظ اورتحقیق کی وزارت ایک لاکھ چالیس ہزار ٹن گندم پہلے ہی فراہم کرچکی ہے۔ ای سی سی نے ای او بی آئی کیلئے 2019-20 کے نظرثانی بجٹ اورسپیشل ٹیکنالوجی زونرز اتھارٹی کیلئے چھ ارب چالیس کروڑ روپے کی منظوری دی۔اجلاس میں وزارت تجار ت کی ٹما ٹر اور پیاز کی برآمد سے متعلق سمری پر بھی تفصیلی غور کیا گیا اور برآمدی امور کے جائزے کیلئے ذیلی کمیٹی قائم کرتے ہوئے ٹماٹر اور پیاز کی برآمد پر فیصلہ موخر کر دیا،جبکہ  اجلاس کے دور ان دونوں مصنوعات کی تین ماہ کیلئے برآمد پر پابندی لگانے کی تجویز دی گئی تھی،دوسرا آپشن ان اشیاء کی محدود برآمد کی اجازت دیناتھا،ذرائع کا کہنا ہے ٹماٹراور پیاز کے حوالے سے فیصلہ 24 گھنٹوں میں کیاجائیگا،دریں اثناء مقامی سطح پر بننے والی کورونا تشخیص کی مشینوں پر ٹیکس اور ڈیوٹی کی چھوٹ دینے کا معاملہ موخر کر دی گئی۔

ای سی سی 

مزید :

صفحہ اول -