زرعی یونیورسٹی،موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کیلئے ویبینار

 زرعی یونیورسٹی،موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کیلئے ویبینار

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر)ایم این ایس زرعی یونیورسٹی میں شعبہ ایگرانومی کے زیر اہتمام موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کیلئے جدید ٹیکنالوجی کراپ ماڈلز کے حوالے سے ایک روزہ(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

 انٹر نیشنل ویبنارکا انعقاد کیا گیا۔انٹر نیشنل سیمینارکی صدارت وائس چانسلر جامعہ پروفیسر ڈاکٹر آصف علی (تمغہ امتیاز)نے کی۔ سیمینار میں پاکستان، امریکہ، جرمنی اور آسٹریلیا کے سائنسدانوں اور زرعی ماہرین نے آن لائن شرکت کی۔ ویبنار سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر جامعہ پروفیسر ڈاکٹر آصف علی نے کہاکہ بدلتے ہوئے موسمیاتی تناظر کو مد نظر رکھتے ہوئے کراپ ماڈلز کی آج کے دور میں بہت ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ زراعت میں جدت لانے کی اشد ضرورت ہے اور اگر زراعت میں کسان و کاشتکارحضرات جدت نہ لائے تو ان کو ہر فصل میں نقصان اٹھانا پڑے گا۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں کم پانی والی فصلیں اگانی چاہیں تاکہ پانی کی قلت کومد نظر رکھتے ہوئے آنے والی نسلوں کیلئے پانی کو بچایا جا سکے۔انہوں نے مزید کہاکہ زرعی یونیورسٹی ملتان ہمہ وقت کسانوں و کاشتکاروں کی بھلائی کیلئے کام کررہی ہے اور اسی سلسلہ میں کم پانی میں اگنے والی فصلات پر کامیاب تجربات بھی کر چکی ہے۔ ویبنار سے یونیورسٹی آف فلوریڈا امریکہ کے پروفیسر ڈاکٹر گریٹ ہوگن بوم نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ موسمیاتی تبدیلیاں پوری دنیا کی فصلات پر اثر انداز ہو رہی ہیں یہ کسی ایک ملک کی پریشانی نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ کراپ ماڈل ملکی زراعت کی پالیسی بنانے والوں کیلئے ساز گار ہو سکتا ہے اس پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ آسٹریلیا سے پروفیسر ڈان نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کراپ ماڈلز کے استعمال سے فصلات پر موسمیاتی تبدیلیوں کے اثرات کو نہ صرف جانچا جا سکتا ہے بلکہ ان سے نمٹنے کیلئے بھی کسانوں کو سفارشات بھی دی جا سکتی ہیں تاکہ کسانوں و کاشتکاروں کی پیداوار کو بڑھایا جا سکے۔ جرمنی کے پروفیسر تھومس نے خطاب کرتے ہوئے کھادوں کے مناسب استعمال کیلئے کراپ ماڈلز کے استعمال اور کھادوں کے ماحول پر اثرات اور ان سے نمٹنے کیلئے سفارشات کے بارے میں سیر حاصل گفتگو کی۔اس کے علاوہ شعبہ ایگرانومی کے ڈاکٹر عبدالغفار،ڈاکٹر حافظ محکم حماد، ڈاکٹر حبیب الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پنجاب میں زراعت پر موسمیاتی تبدیلیوں کے اثرات اور ان سے نمٹنے کیلئے حکمت عملی تیار کر لی، گئی ہے۔انہوں نے مزید فصلوں کی پیداوار کو بڑھانے کیلئے سفارشات پیش کیں۔ اس موقع پرڈاکٹرعمار مطلوب، ڈاکٹر آصف شہزاد، ڈاکٹر عامر بختاور، ڈاکٹر مدثر سمیت دیگر سائنسدانوں اور ماہرین نے کثیر تعداد میں آن لائن شرکت کی۔

ویبینار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -