’ای سگریٹ جنسی تعلق قائم کرنے کی صلاحیت متاثر کرتی ہے‘ ماہرین نے خبردار کردیا

’ای سگریٹ جنسی تعلق قائم کرنے کی صلاحیت متاثر کرتی ہے‘ ماہرین نے خبردار ...
’ای سگریٹ جنسی تعلق قائم کرنے کی صلاحیت متاثر کرتی ہے‘ ماہرین نے خبردار کردیا
سورس: Pxfuel (creative commons license)

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) روایتی سگریٹ کی جگہ اب ای سگریٹ دنیا میں مقبول ہو رہے ہیں اور عام خیال پایا جاتا ہے کہ یہ روایتی سگریٹ جتنے خطرناک بھی نہیں ہوتے، تاہم اب ماہرین نے ان کے متعلق بھی لوگوں کو متنبہ کر دیا ہے۔ دی سن کے مطابق پرویندر ساگو نامی طبی ماہر نے بتایا ہے کہ 2019ءمیں کی جانے والی ایک تحقیق میں برطانوی محکمہ صحت کے ای سگریٹ پینے والوں پر ایک تحقیق کی اور اس کے نتائج میں اس کے سات انتہائی خطرناک نقصانات کا انکشاف کیا۔ 

رپورٹ کے مطابق ان نقصانات میں ای سگریٹ پینے والی خواتین کا بانجھ پن کا شکار ہونا، یہ سگریٹ پینے والوں کو کمردرد لاحق ہونا، چہرے پر کیل مہاسے اور دانے وغیرہ نکلنا شروع ہو جانا، دماغ کی نشوونما اوریادداشت و ذہنی استعداد کار کا شدید متاثر ہونا،روایتی سگریٹ کی طرح اس کی لت میں مبتلا ہونا، دل اور پھیپھڑوں کو انتہائی نقصان پہنچانا، جنسی تعلق قائم کرنے کی صلاحیت کو نقصان پہنچا کر ازدواجی زندگی کو تباہ کرناشامل ہیں۔ 

پرویندر کا کہنا تھا کہ ای سگریٹ کی بھی روایتی سگریٹ کی طرح ہی لت لگ جاتی ہے اور ان سے جان چھڑانا بھی اتنا ہی مشکل ہوتا ہے۔ جو لوگ ان سے جان چھڑانا چاہتے ہیں انہیں سب سے پہلے سوچنا چاہیے کہ وہ سگریٹ نوشی کیوں ترک کرنا چاہتے ہیں، اس کے لیے وہ اپنی صحت اور اپنی فیملی کی فلاح کو اپنے ذہن میں لا سکتے ہیں۔ پھر آپ سگریٹ نوشی ترک کرنے کا فیصلہ کریںا ور اس پر ثابت قدم رہیں۔ یک دم سگریٹ نوشی ترک کرنے کی بجائے ایک تاریخ متعین کریں اور اس تاریخ کے آنے تک خود کو ذہنی طور پر سگریٹ چھوڑنے کے لیے تیار کریں۔ جب وہ تاریخ آئے تو آپ کو ذہنی طور پر اس کے لیے یکسو ہونا چاہیے اور اس دن کے بعد خود کو ہمیشہ کے لیے سگریٹ سے دور کر لیں۔ایسے ماحول سے بھی گریز کریں جہاں لوگ سگریٹ پیتے ہوں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -