معاشی بدحالی اور گھریلوناچاقی،طلاق کا رجحان دن بدن بڑھتا جا رہاہے،خواتین وکلائ

معاشی بدحالی اور گھریلوناچاقی،طلاق کا رجحان دن بدن بڑھتا جا رہاہے،خواتین ...

لاہور (دیبا مرزا سے) گھریلو نا چا قی ،معا شی پریشا نی ، خاندانی تنازعات کے باعث گارڈین کورٹس وفیملی کورٹس میں پچھلے دو ما ہ کے دوران 3500 سے زائد مقدما ت دائر کئے گے۔جن میں0 100 سے زائد طلاق کے،605 مقدمات بچوں کی تحویلگی ,800 سے زائد نان نفقہ اور ملاقات کے مقدمات دائر کئے گئے۔پاکستان رپورٹ کے مطا بق صوبا ئی دارلحکومت میں واقع 12 سے زائد فیملی کو رٹس اور گا رڈین کورٹس میں مقدمات کی تعدادمیں روز بروز اضا فہ ہو رہا ہے ۔ طلاق کے کیسز کی تعداد میں سب سے اضا فہ ہوا ہے اس حوالے سے خواتین ایڈووکیٹ فوزیہ بتول، سبحانہ شفق نے روزنا مہ پا کستان سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا ہے کہ معاشی بدحالی اور گھریلو ناچاقی کی وجہ سے والدین میں طلاق ہو جاتی ہے بچوں کی حوالگی اور والدین میں علیحدگی کے کیسز میں پچھلے سال کی نسبت اس سال کئی گناہ اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس کے باعث بچوں کو کسی ایک سے دور کر دیا جاتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اب تو کوئی بھی جوڑا صلح صفائی کی کوشش نہیں کرتا ہے۔ طلاق کا رجحان روز بروز بڑھتا جا رہا ہے اور بچوں کی کافی بڑی تعداد ایسی ہے جو کہ ماں باپ کے پیار سے محروم زندگی گزارنے پر مجبورہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1