بادمی باغ آٹو سپیئر پارٹس مارکیٹ جعلی موبل آئل کی منڈی میں تبدیل

بادمی باغ آٹو سپیئر پارٹس مارکیٹ جعلی موبل آئل کی منڈی میں تبدیل

لاہور(ج الف ) ایشیاءکی سب سے بڑی آٹو سپیئر پارٹس کی مارکیٹ بادامی باغ جعلی موبل آئل اور بریک آئل اور گیئر آئل کی منڈی میں تبدیل ہوگئی ہے۔ 52مقامات پر یہ دھندا ہورہا ہے۔مارکیٹ کے اندر اور دیگر علاقوں میں ایسا آئل بنانے کے کئی کارخانے ہیں۔ضلعی حکومت،مقامی پولیس اور سی آئی اے کے بعض آفیسرز ایسا دو نمبر آئل بنانے والوں کے مبینہ طور پر سرپرست ہیں۔ اِ س طرح کا آئل پورے لاہور میں سپلائی کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر علاقوں میں بھی سپلائی کیا جاتا ہے۔کئی بڑی آئل کمپنیوں کے مقامی ڈیلرز اور دیگر افسران بھی اِس دھندے میں ملوث ہیں۔بتایا گیا ہے کہ ماہرین آٹو موبائل کا کہنا ہے کہ ایسے آئل کے استعمال سے گاڑی کی عمر آدھی رہ جاتی ہے ۔رپورٹ کے مطابق بادامی باغ میں52 مقامات پر جعلی موبل آئل بنایا جارہا ہے جن میں بریک آئل ، گیئر آئل اور عام انجن آئل بھی تمام کمپنیوں کے نام سے تیار کیا جارہا ہے اور سکینگ کی مد میں باقاعدہ طور پر مقامی سطح پر جعل سازی کررہے ہیں اورمافیا کے لوگ لاہور بھر کے آئل تبدیل کرنے والوں سے رابطے میں رہتے ہیں اور ایسا کرنے والے مختلف ناموں سے آئل تیار کرنے والی کمپنیوں کے خالی ڈبے خرید لیتے ہیں۔ضائع شدہ تیل بھی حاصل کرتے ہیں اور بعد میں اپنے کارخانوں میں لے جاکر دوبارہ اِن ڈبوں میں بھر کر مارکیٹ میں دوبارہ لے آتے ہیں اور ڈبے بھر کر لاہور سمیت دیگر صوبوں میں بھی سپلائی کرتے ہیں۔ اِس حوالے سے ماہرین آٹو موبائل انجینئر قدیر سہگل کا کہناہے کہ ایسا آئل بادامی باغ میں،لاہور کے دیگر مقامات پر بھی تیار کرکے فروخت کیا جارہا ہے۔ایسا آئل عام طور پر ٹرک اڈوں، لاری اڈوں ور چوکوں اور چھوٹے شہروں اور قصبوں میں فروخت کیا جاتا ہے۔ جو لوگ ایسا آئل استعمال کرتے ہیں،اُن کی گاڑیوں کی زندگی آدھی رہ جاتی ہے۔نئی گاڑی کا انجن پہلے 6ماہ میں ہی فارغ ہوجاتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1