مالک کو گرفتار کر کے کمپنی پر پابندی عائد کی جائے، مذہبی جماعتوں کا رد عمل

مالک کو گرفتار کر کے کمپنی پر پابندی عائد کی جائے، مذہبی جماعتوں کا رد عمل

لاہور(نمائندہ خصوصی) مذہبی جماعتوں نے معروف بلڈرز رﺅف اینڈ کمپنی کے بلڈوزر کے نیچے آ کر جان سے ہاتھ دھونے والے اوکاڑہ کے محنت کش سات بیٹیوں کے باپ کی ہلاکت افسوس اور کمپنی کی بے حسی کے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت فوری مذکورہ کمپنی کے مالک کو گرفتار کرے، سات بچیوں کی کفالت کی ذمہ داری اٹھائے اور کمپنی کی طرف سے مزدوری کے حقوق پورے نہ کرنے پر اسے بین کرے، جماعت اسلامی پنجاب کے امیر ڈاکٹر وسیم اختر نے کہا کہ حکومت اس واقعہ کا سخت ایکشن لے کمپنی کی غفلت بے حسی پر نہ صرف اسے بین کیا جائے بلکہ کمپنی سے ہلاک ہونے والے مزدور کے اہل خانہ کی کفالت کرانے کیلئے معقول رقم کا بندوبست کیا جائے، انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے ملک میں لیبر قوانین پر عمل ہوتا تو کوئی بھی مزدور بے بسی کی موت نہ مرتا، حکومت لیبر قوانین پر سختی سے عمل کرائے۔جے یو آئی کے ترجمان مولانا امجد خاں نے اس حوالے سے کہا کہ کمپنی کا مالک ارو حکومت دونوں برابر کے ذمہ دار ہیں، اگر حکومت کی طرف سے مزدوروں کے حقوق دئیے جاتے تو کمپنی کا مالک اس طرح دندناتا نہ پھرتا، مالک کو فوری گرفتار کیا جائے، مزدور کے لواحقین کی کفالت کا فوری بندوبست کیا جائے تا کہ سات بچیوں کو سر کی چھت نصیب ہو سکے، جے یو پی کے رہنما رشید رضوی نے کہا کہ ہمارے ملک کی بدقسمتی ہے کہ ہمارے ہاں مزدور کو تحفظ حاصل نہیں ہے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ ہلاک ہونے والے بدنصیب مزدور صدیق کے بچوں کو انصاف فراہم کیا جائے ان کی فوری طور پر مالی مدد کے ساتھ مذکورہ کمپنی کے خلاف کارروائی کی جائے۔

مزید : صفحہ اول