سندھ کا نیا بلدیاتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج

سندھ کا نیا بلدیاتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج
سندھ کا نیا بلدیاتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) سندھ میں نیا بلدیاتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ رجسٹری میں کراچی سٹی الائنس کی جانب سے درخواست دائر کی گئی جس میںوزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ اور گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد سمیت دیگر اعلیٰ حکام کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سندھ میں نئے بلدیاتی آرڈیننس کا اجرا آئین کے خلاف ہوا ہے کیونکہ صوبے میں کسی قسم کی کوئی ہنگامی صورتحال نہیں تھی کہ آرڈیننس جاری کیا جاتا۔

درخواست گزار کے مطابق دو جماعتوں کے درمیان مسلسل مذاکرات کے نتیجے میں یہ آرڈیننس جاری کیا گیا جو کہ آئین کی شقوں سے انحراف ہے اور اس کی ضرورت بھی نہیں تھی۔ اس سے قبل بھی نئے بلدیاتی آرڈیننس نے صوبے بھر کو ہنگامی کیفیت میں مبتلا کیا ہوا ہے اور اس کی وجہ سے حکومت کی اتحادی جماعت اے این پی بھی آرڈیننس کے اجرا کے بعد سندھ حکومت سے علیحدہ ہوچکی ہے جبکہ سندھ کی قوم پرست جماعتوں نے بھی نئے آرڈیننس کو مسترد کر دیا ہے۔

مزید : کراچی