لاجواب فضائی سروس کی بم اطلاعات کو مسافروں نے ڈرامہ قراردیدیا

لاجواب فضائی سروس کی بم اطلاعات کو مسافروں نے ڈرامہ قراردیدیا
لاجواب فضائی سروس کی بم اطلاعات کو مسافروں نے ڈرامہ قراردیدیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور،کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)قومی ایئرلائن کے جہازوں کی ابتر حالت اور موسم کی خرابی سے پروازوں کے شیڈول متاثر ہونے کے بعد اب جہازوں کی بم کی اطلاع پر پروازوں کی غیر معمولی تاخیر شروع ہوگئی ہے ۔لاہور میں گذشتہ دوروزکے دوران جہازوں میں بم کی اطلاع کی دو ٹیلی فون کالیں موصول ہوچکی ہیں ۔

قومی ایئرلائن کی پرواز پی کے 303تین گھنٹوں کی تاخیر سے علامہ اقبال انٹر نیشنل ایئرپورٹ پر موجود ہے اور بم ڈسپوزل سکواڈ کا عملہ جہاز کی تلاشی لے رہاہے ۔مقامی میڈیا کے مطابق پی کے 303کی روانگی سے چند لمحے قبل ملنے والی بم کی اطلاع پر جہاز کو آف لوڈ کروالیاگیاہے اور کلیئرنس ملنے کے بعد دوبارہ روانہ کردیاجائے گا۔واضح رہے کہ گذشتہ روز کراچی سے لاہور آنے والی قومی ایئرلائن کی پرواز پی کے 304میں بھی بم کی جھوٹی اطلاع دی گئی جو تین گھنٹوں بعد روانہ کردی گئی ۔نجی چینل کے مطابق تین گھنٹوں بعد روانہ ہونے والی پرواز میں دوسری پرواز کے مسافر بھی شامل تھے ۔

مقامی میڈیا کے مطابق پی آئی اے کے پاس مسافروں کی کمی ہے اور اُس کو پورا کرنے کے لیے کالیں چلائی جاتی ہیں اور بعد ازاں دونوں پروازوں کے مسافروں کو اکٹھا کر کے ایک پرواز سے روانہ کردیاجاتاہے ۔مقامی میڈیا پر نشر ہونیوالی رپورٹس میں مسافروں کا کہناتھاکہ آپریشنل وجوہات فضائی سفرکی وسیع ٹرم ہے اور آپریشنل وجوہات کاکہہ کر گھنٹوں پروازیں لیٹ ہوجاتی ہیں ۔مقامی اخبار کے مطابق علامہ اقبال انٹر نیشنل ایئرپورٹ کے منیجر تیمور اصغر پرواز کی تاخیر کی اطلاع ملنے پر اپنی گاڑی میں براستہ موٹر وے اسلام آباد روانہ ہوگئے اور پرواز سے قبل ہی وہ اسلام آباد میں پہنچ گئے حالانکہ جہاز کاسفر انتہائی مہنگا ہونے کے باوجود صرف اور صرف منزل تک بروقت پہنچنے کے لیے ہی کیاجاتاہے ۔

مزید : بزنس