یوم ختم نبوتؐ

  یوم ختم نبوتؐ

  

بہاولپور + لیاقت پور + رحیم یار خاں + خانیوال + وہوا + کبیروالا +راجن پور (ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نامہ نگار‘ تحصیل رپورٹر‘ بیورو رپورٹ‘ نمائندہ پاکستان) عالمی مجلس ختم نبوت بہاولپور کے زیر اہتمام پریس کلب میں (بقیہ نمبر2صفحہ 6پر)

 ختم نبوت سیمینار منعقد ہوا۔جس میں مختلف دینی جماعتوں کے قائدین نے شرکت کی۔سیمینار سے عالمی مجلس ختم نبوت بہاولپورکے امیر مولانا اسحاق ساقی نے کہا ہے کہ عقیدہ ختم نبوت اور تحفظ ناموس رسالت مسلمانوں کی اساس ہے۔ قادیانی بہت بڑا فتنہ ہے جو عقیدہ ختم نبوت کے خلاف بڑی سازش ہے۔ 7 ستمبر تجدید عہد کا دن ہے۔ یوم ختم نبوت پر جاری اپنے پیغام میں صوبائی امیر نے مزید کہا کہ 7 ستمبر 1974 ایک تاریخی و مسلمانوں کی فتح کا دن ہے۔جمعیت علماء اسلام(ف) پنجاب کے نائب امیر مفتی مظہر اسعدی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی مسلمان چاہے کتنا ہی گنہگار کیوں نہ ہو وہ عقیدہ ختم نبوت اور تحفظ ناموس رسالت پر اپنی جان قربان کرسکتا ہے۔ نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا کہ ایک طرف ہمارے اکابرین حضرت مولانا مفتی محمود، شاہ احمد نورانی اور پروفیسر غفور احمد سمیت دیگر نے پارلیمنٹ کے اندر جدوجہد تو دوسری جانب بانی جماعت اسلامی مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودیؒ کی علمی کوششوں سے تیار کردہ 1973 کے آئین میں مسلم و غیر مسلم کی تعریف کی شکل میں فتنہ قادیانیت کی آئینی و قانونی محاز پر بیخ کنی کی ہو گئی،مولانا مودودی کو فتنہ قادیانیت کتاب لکھنے پرپھانسی کی سزا بھی سنائی گئی تھی مگر انہوں نے اپنامشن جاری رکھا ور قادیانیوں کا بھرپور پیچھا کیا۔1953میں مولانا مودودی نے قادیانیوں کو اپنے حقوق مانگنے پر بھرپور اور ایمان افراوزجواب دیاتھا۔مولانا صہیب احمد نے خطاب میں کہا کہہ اعلیٰ عہدوں پر بیٹھے ہوئے قادیانی پاکستان کی سا لمیت کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں اور حکمران امریکہ و سامراجی اور استعماری قوتوں کی خوشنودی اور ڈالرز کے لیے پاکستان کی نظریاتی بنیادوں کو کھوکھلا کر رہے ہیں۔جماعت اہلحدیث کے رہنماء شیخ عبدالطیف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  72 سال بعد بھی پاکستان کے بائیس کروڑ عوام تحفظ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔ ظفر اقبال اعوان ایڈوکیٹ نے کہا کہ جس طرح 6 ستمبر یوم دفاع پاکستان ہے، اسی طرح 7 ستمبر یوم دفاع عقیدہ اور ایمان ہے۔ عقیدہ جغرافیہ سے مقدم ہے۔ اگر عقیدہ محفوظ ہوگا تو جغرافیہ بھی محفوظ رہے گا۔ یوم تحفظ ختم نبوت کے موقع پر متحدہ دینی محاذ لیاقت پور کے زیر اہتمام ریلی نکالی اور جلسہ کا انعقاد کیا گیا چنی گوٹھ روڈ سے نکالی گئی ریلی میں موٹر سائیکلوں اور گاڑیوں پر سوار سینکڑوں افراد چوک گھنٹہ گھر پہنچے جہاں ریلی کے قائدین قاضی محمد سمیع ایڈووکیٹ جماعت اسلامی، مولانا حافظ محمد اسلم حنیف مرکزی جمعیت اہل حدیث،مولانا اصغر علی ناصر جمعیت علماء اسلام، قاری محمد اکرم چشتی جمعیت علماء پاکستان کے علاوہ مولانا محمد الیاس جامعہ قادریہ، مفتی محمد سلیم رضوی جامعہ کرماں والا اور مفتی غلام سبحانی قادری نے خطاب کیا اور کہا کہ آج کے دن 1974 میں قومی اسمبلی نے متفقہ طور پر پر قادیانیت کے فتنے کا ہمیشہ کے لئے خاتمہ کر دیا تھا مقررین نے اس تاریخی کارنامہ پر مولانا شاہ احمد نورانی، مولانا مفتی محمود، مولانا عبدالستار نیازی، علامہ احمد سعید کاظمی، زوالفقارعلی بھٹو، نوابزادہ نصراللہ خان،عبد الولی خاں، مولانا محمد یوسف بنوری اور دیگر اکابرین کو بھی خراج تحسین پیش کیا۔ جمعیت علمائے  پاکستان کے زیر اہتمام ختم نبوتؐ زندہ باد کے حوالہ جے یو پی کے ڈویژنل صدر چوہدری محمد ریاض نوری کی قیادت میں ریلی نکالی گئی جس میں صوبائی صدر علامہ نوراحمد سیال، قاری سیف الرحمن، محمداکرم نورانی ودیگر علماء کرام نے شرکت کی ریلی کے شرکاء ڈسٹرکٹ پریس کلب کے سامنے فرانس میں نبی کریمؐ کی شان میں گستاخی والے خاکہ شائع کرنے، گستاخ اور مقدس اوراق جلائے جانے اوراس کی بحرمتی کرنے کے خلاف نعرے لگارہے تھے۔ اس موقع پر چوہدری محمدریاض نوری، علامہ نوراحمدسیال نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ 7ستمبر 1974پاکستان کی تاریخ کا ایک اہم ترین دن ہے جس نے پارلیمنٹ اورخاص کر علامہ شاہ احمدنورانی کی خصوصی کوششوں اورجدوجہد سے اس وقت کے وزیراعظم ذوالفقارعلی بھٹو نے قادیانیوں کو کافر قراردینے والی تاریخی دستاویز پر دستخط کرکے تاریخ میں اپنا نام سنہری حروف میں لکھوایا اورہماری اساسی نظریات کی حفاظت کی۔ جغرافیائی سرحدوں کے ساتھ ساتھ نظریاتی سرحدوں کی حفاظت ضروری ہے، استحکام پاکستان کے لئے قربانیاں دینے والے پوری قوم کے محسن ہیں،  پاکستان خالص اسلامی نظریاتی ملک ہے، عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ اور دفاع پاکستان لازم و ملزوم ہیں، منکرین ختم نبوت ملک وقوم کے غدار ہیں، آئین پاکستان کو تسلیم نہ کرنے والے طبقات کے خلاف طاقت کا استعمال ناگزیر ہے، قادیانی جب تک آئین پاکستان کو تسلیم نہیں کرتے اس وقت ان کے شناختی کارڈز اور پاسپورٹ منسوخ کئے جائیں، ان خیالات کا اظہاراسلامک ریسرچ سنٹر خانیوال کے ڈائریکٹر، تحفظ نظریہ پاکستان فورم کے مرکزی چیئرمین ڈاکٹر مفتی خالد محمود ازھر، انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے ضلعی صدر مولانا محمد اقبال ساجد، ممبر امن کمیٹی صاحبزادہ مولانا محمد افضل عباس مرکزی علماء کونسل کے ضلعی صدر مولانا محمد لقمان حنبلی، نے اسلامک ریسرچ سنٹر خانیوال کے زیراہتمام تحفظ ختم نبوت و استحکام پاکستان سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان خالص اسلامی نظریاتی ملک ہے، جس کی نظریاتی سرحدیں اسلامی عقائد وافکار ہیں، آج وطن عزیز کا نظریاتی تشخص مجروح کرنے کی سازشیں عروج پر ہیں، سیکولر عناصر مختلف انداز سے محنت کر رہے ہیں، حکومت اور اداروں کو ایسے عناصر کا قلع قمع کرنا چاہئے۔ عمران خان قادیانیوں کو مسلمانوں کی لسٹ میں شامل کرنے اور ناموس رسالتؐ کے قانون کا خاتمہ کرنے کا ایجنڈہ لے کر اقتدار میں آئے ہیں یہ بات مرکزی رہنماء عالمی مجلس تحفظ ختم نبوتؐ پاکستان مولانا محمد اسماعیل شجاعبادی نے وہوا میں ختم نبوت کانفرنس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ قادیانی خو دکو مسلمان بنانے کے لیے اپنے مغربی آقاؤں کے ذریعے پاکستان میں برسراقتدار آنے والی حکومتوں پر دباؤ ڈلواتے ہیں میاں نواز شریف کے حکومت کے آخری دنوں میں انتخابی اصلاحات میں مسلمان ہونے کے حوالہ سے حلفیہ بیان ختم کرانے کی کوشش کی گئی جس پر عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت نے اسلام ہائیکورٹ میں رٹ دائر کی جس پر حلفیہ بیان کی شق دوبارہ بحال کردی گئی۔ ملک بھر کی طرح کبیروالا شہر اور گردونواح میں ”یوم ختم نبوتؐ“مذہبی جوش وجذبے کے ساتھ منایا گیا۔ شبان ختم نبوتؐ لائرز فورم کبیروالا کے زیر اہتمام بار روم کبیروالا میں ”یوم ختم نبوتؐ“ کے سلسلہ میں منعقدہ تقریب سے جامعہ دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا کے مہتمم شیخ الحدیث علامہ ارشاد احمد،بار ایسوسی ایشن کبیروالا کے صدر ملک آفتاب احمد کھوکھر،جنرل سیکرٹری مسعود پرویز خان بھٹہ، سابق رانا عمردراز خان، عالمی مبلغ مولانا منیر احمد علوی،راؤ محمد انور،شیخ عبدالحفیظ،حافظ عمر اطہراور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ”عقیدہ ختم نبوتؐ“پر پختہ یقین کامل ایمان کی بنیادہے،عقیدہ ختم نبوتؐ کا تحفظ ہر مسلمان کی ذمہ داری، اس کے ایمان کا تقاضہ، آخرت میں حصول جنت اور شفاعتِ رسولؐ کا ذریعہ ہے۔ختم نبوت کا عقیدہ اسلام کا وہ بنیادی اور اہم عقیدہ ہے جس پر پورے دین کا انحصار ہے اگر یہ عقیدہ محفوظ ہے تو پورا دین محفوظ ہے۔الوفا ویلفیئر آرگنائزیشن تحصیل کبیروالا کے زیر اہتمام ”یوم ختم نبوتؐ“ کے حوالے سے منعقدہ سیمینار سے علامہ عصمت اللہ خان ملتانی،مولانا عبدالمجید انور،میاں محمود احمد صدیقی،مولانا محمد زبیر،مولانا محمد صدیق ثاقب،مولانا احمد سعید ملتانی،مولانا ذکاء اللہ خان،قاری عبدالروف،مہر نوید اسحاق کھنڈویا،خان شہباز اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عقیدہ ختم نبوتؐ، اسلام کا وہ بنیادی عقیدہ ہے جس میں معمولی سا شبہ بھی قابل برداشت نہیں،ختم نبوتؐ کے قانون کا تحفظ بطور مسلمان ہر ایک شخص پر فرض ہے،7 ستمبر 1974ء پاکستان کی تاریخ کا وہ عظیم تاریخی دن تھا جس روز آئین میں عقیدہ ختم نبوتؐ کو اس کی مکمل روح کے مطابق نافذکردیا گیا۔ ختم نبوت چوک راجن پور میں 7ستمبر یوم تحفظ ختم نبوت کے حوالے سے ایک کانفرنس کا انعقاد کیا گیا  جس میں تمام مسالک کے علما کرام نے شرکت کی اجلاس کی صدارت صاحبزادہ جلیل الرحمن صدیقی ضلعی امیر عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت نے کی کانفرنس میں صاحبزادہ جلیل الرحمن صدیقی، مولانا عبد الصمد درخواستی سید مشتا ق احمد رضوی،قاری عزیز اکبر قاسمی ڈسٹرک میڈیاسیل مولاناجلیل الرحمان صدیقی نے خطاب کرتے ہوئے کہا عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ امت مسلمہ کی مشترکہ ذمہ داری ہے  اتحاد امت کے لیے عقیدہ ختم نبوت سے بڑھ کر کوئی فارمولانہیں عقیدہ ختم نبوت ایمان کا اہم ترین جزو ہے۔

مذہبی جوش و جذبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -