جو نہ نقدِ داغ دل کی کرے شعلہ پاسبانی

جو نہ نقدِ داغ دل کی کرے شعلہ پاسبانی
جو نہ نقدِ داغ دل کی کرے شعلہ پاسبانی

  

جو نہ نقدِ داغ دل کی کرے شعلہ پاسبانی

تو فسردگی نہاں ہے بہ مکین، بے زبانی

مجھے اس سے کیا توقع بہ زمانۂ جوانی

کبھی کود کی میں جس نے نہ سنی مری کہانی

یونہی دکھ کسی کو دینا نہیں خوب، ورنہ کہتا

کہ میرے عدو کو یارب ملے میری زندگانی

شاعر: مرزا غالب

Jo Na Naqd e Daagh e Dil Ki Karay Shola Bayaani

To Fasurdagi  Nihaan Hay, Ba Makeen e Be Zubaani

Mujhay Uss Say Kaya Tawaqo Ba Zamaana e jawaani

Kabhi Kod  Ki  Main Jiss Nay , Na Suni Miri Kahaani

Yunhi Dukh  Kisi Ko Dena  Nahen Khoob Warna Kehta

Keh Miray Udu Ko Ya RAB Milay Miri Zindgaani

Poet: Mirza Ghalib

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -