پاکستان، کابل سے انخلا کے عمل میں معاونت کا سلسلہ جاری رکھے گا،شاہ محمود  

پاکستان، کابل سے انخلا کے عمل میں معاونت کا سلسلہ جاری رکھے گا،شاہ محمود  

  

  اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے رومانوی ہم منصب کو یقین دلایاہے کہ پاکستان، کابل سے انخلا کے عمل میں معاونت کے سلسلے کو جاری رکھنے کیلئے پر عزم ہے، پاکستان، رومانیہ کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے۔منگل کو  رومانیہ کے وزیر خارجہ بوگڈن آرسکو نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو ٹیلیفون کیا،دونوں وزرائے خارجہ کے مابین دو طرفہ تعلقات اور افغانستان کی موجودہ صورتحال پر تفصیلی تبادلہ ہوا۔وزیر خارجہ نے رومانیہ کے وزیر خارجہ کو افغانستان کی صورتحال پر پاکستان کے موقف سے آگاہ کیا۔رومانیہ کے وزیر خارجہ نے کابل سے رومانوی شہریوں کے محفوظ انخلا میں معاونت پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور پاکستانی قیادت کا شکریہ ادا کیا ۔وزیر خارجہ نے رومانوی ہم منصب کو یقین دلایا کہ پاکستان، کابل سے انخلا کے عمل میں معاونت کے سلسلے کو جاری رکھنے کیلئے پر عزم ہے۔ دریں اثناکینیا کی وزیر دفاع مونیکا جوما نے بھی  وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو ٹیلیفون کیا جس دوران و طرفہ تعلقات اور افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال پر تبادلہ  خیال کیاگیا۔منگل کو کینیا کی وزیر دفاع، مونیکا جوما نے  وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو ٹیلیفون کیا اوردو طرفہ تعلقات اور افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال پر تبادلہ  خیال ہوا۔وزیر خارجہ نے کینیا کی وزیر دفاع مونیکا جوما کو،2020 میں نیروبی میں منعقدہ پہلی پاک افریقہ تجارتی کانفرنس کے موقع پر ہونیوالی ابتدائی ملاقات کا حوالہ دیتے ہوئے، انہیں افغانستان کی موجودہ صورتحال اور پاکستان کے نقطہ نظر سے آگاہ کیا۔وزیر خارجہ نے، مختلف ممالک کے سفارتی عملے، شہریوں اور بین الاقوامی اداروں کے اہلکاروں کے کابل سے انخلا میں پاکستان کی جانب سے فراہم کی گئی معاونت سے آگاہ کیا۔دونوں رہنماؤں نے کینیا کے مسلح افواج کے سربراہ کے، جون 2021 میں کیے گئے دورہ  پاکستان کو سراہتے ہوئے، اسے پاکستان اور کینیا کے مابین دفاعی روابط کے فروغ کا باعث قرار دیا۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -