3سال میں برسوں کے کام نمٹائے، سابق حکمران باتیں بناتے رہے، ہم حقیقی منصوبے لائے ہیں: عثمان بزدار

      3سال میں برسوں کے کام نمٹائے، سابق حکمران باتیں بناتے رہے، ہم حقیقی ...

  

  لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے خیبر پختونخواکے صوبائی وزیر شوکت یوسف زئی کی قیادت میں وفدنے ملاقات کی،جس میں باہمی دلچسپی کے امور،بین الصوبائی ہم آہنگی کے فرو غ اورصوبوں کے درمیان روابط مزیدمضبوط بنانے کے حوالے سے تبادلہ خیال کیاگیا۔شوکت یوسف زئی اوروفد نے پنجاب کے عوام کی ترقی وخوشحالی کیلئے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے اقدامات کوسراہا۔خیبر پختونخواکے صوبائی وزیر شوکت یوسف زئی نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی قیادت میں پنجاب حکومت نے عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے ٹھوس اقدامات کیے ہیں اورآپ نے صوبوں کے درمیان ہم آہنگی اوربھائی چارے کے فروغ کیلئے عملی اقدامات کیے ہیں۔ہمارے وفد نے آپ کی قیادت میں پنجاب میں پائیدار ترقی کا خودمشاہدہ کیاہے جس پر ہمیں بے حد خوشی ہوئی  ہے۔شوکت یوسف زئی نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو خیبر پختونخوا کے دورے کی دعوت دی۔شوکت یوسف زئی اوروفد کی درخواست پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے خیبرپختونخوامیں سیف سٹی پراجیکٹ کیلئے تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ملاقات میں پنجاب اورخیبر پختونخوا کے درمیان روابط کو مزید بہتر بنانے اوروفود کے زیادہ سے زیادہ تبادلوں پر اتفاق کیاگیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تین سال کی مختصر مدت میں برسوں کے کام نمٹائے ہیں۔سابق حکمران باتیں بناتے رہے، ہم حقیقی منصوبے لائے ہیں۔پنجاب دوسرے صوبوں کو ساتھ لے کر چلنے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔اضلاع کی یکساں ترقی کیلئے ڈویلپمنٹ پیکیج پر عملدرآمد شروع ہو چکا ہے۔انہوں نے کہا کہ سیاست میں رواداری اور احترام کے قائل ہیں۔انتقام نہیں بلکہ مثبت سیاسی روایات قائم کی ہیں۔ سردارعثمان بزدار نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف جنوبی پنجاب کی محرومیوں کا ازالہ کرنے کیلئے پرعزم ہے۔پنجاب کابینہ نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کی خودمختاری کیلئے تاریخ ساز فیصلہ کیا ہے۔جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کیلئے پنجاب گورنمنٹ رولز آف بزنس میں ترمیم کی منظوری دی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایڈیشنل چیف سیکرٹری، سیکرٹریز اور محکموں کے اختیارات کو واضح کر دیا گیاہے۔ ساؤتھ پنجاب سیکرٹریٹ 3 ڈویژن اور 11 اضلاع پر مشتمل ہوگا۔ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ میں سرکاری محکموں کی تعداد 17 ہوگی۔انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے ایڈیشنل چیف سیکرٹری اور سیکرٹریز کو انتظامی طور پر مکمل بااختیاربنایا گیاہے۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے جنوبی پنجاب کے عوام سے کئے وعدہ کی پاسداری کرتے ہوئے عملی قدم اٹھایا ہے۔ پنجاب کی تاریخ میں پہلی دفعہ ساؤتھ پنجاب کیلئے الگ اے ڈی پی بک کا اجراء کیا گیا ہے۔ جنوبی پنجاب کے لئے 33 فیصد بجٹ مختص کیا ہے جو کہ 190 ارب روپے بنتا ہے - 

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -