مظفرگڑھ میں خاتون پولیس افسرسے زیادتی کا معاملہ نیا رخ اختیارکرگیا

مظفرگڑھ میں خاتون پولیس افسرسے زیادتی کا معاملہ نیا رخ اختیارکرگیا
مظفرگڑھ میں خاتون پولیس افسرسے زیادتی کا معاملہ نیا رخ اختیارکرگیا

  

مظفر گڑھ (ویب ڈیسک) لیڈی سب انسپکٹرکے مبینہ اغواء، تشدد اورزیادتی کے الزامات کے معاملے میں  تھانہ سٹی کی 4 ستمبر کی سی سی ٹی وی فوٹیج نے معاملے کونیا رخ دے دیا اور  معاملے کی صداقت کے حوالے سے شکوک وشبہات کو بڑھا دیا ہے۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج میں ملزم کی مبینہ کار اورملزم کو دیکھا جاسکتا ہے۔ فوٹیج میں تھانہ سٹی سے نکلتی ایک پولیس اہلکار کو کار میں اپنی مرضی سے بیٹھتے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔ کارمیں بیٹھنے والی اہلکارمقدمے کی مدعی لیڈی سب انسپکٹرہی ہے، سی سی ٹی وی فوٹیج کی تاریخ اوروقت بھی بتائے گئے واقعے کے حوالے سے میچ کرتے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق کارمیں بیٹھنے والی خاتون کی عبایا اوراسکارف کا رنگ بھی وہی ہے جو لیڈی سب انسپکٹر کی میڈیکل رپورٹ میں درج ہے۔

سی سی ٹی وی فوٹیج کے بعد لیڈی سب انسپکٹرکے ملزم کاشف کے ساتھ تعلق کے حوالے سے تحقیقات کی جارہی ہیں۔ سی سی ٹی وی فوٹیج میں اغواء کے حوالے سے کوئی شواہد نہیں نظر آرہے۔ تاہم نئے حقائق سامنے آنے کے بعد کیس کی ایک نئے پہلو سے تحقیقات شروع کردی گئیں۔

واضح رہے کہ 3 روزقبل مظفرگڑھ میں خاتون پولیس افسرکو اغوا کرکے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا تھا۔ تشدد اورزیادتی کے بعد سفاک ملزم خاتون پولیس انسپکٹر کو جائے وقوعہ پرہی چھوڑ کر فرار ہوگیا تھا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -مظفرگڑھ -