کابل ایئر پورٹ کی بحالی، ترک وزیر خارجہ نے طالبان کو واضح پیغام دے دیا

کابل ایئر پورٹ کی بحالی، ترک وزیر خارجہ نے طالبان کو واضح پیغام دے دیا
کابل ایئر پورٹ کی بحالی، ترک وزیر خارجہ نے طالبان کو واضح پیغام دے دیا

  

انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) ترک وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ ترکی کابل ایئرپورٹ کو آپریشنل بنانے کے لیے امریکہ اور قطر کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے اور اس حوالے سے طالبان کے ساتھ بھی بات چیت جاری ہے۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق ترک وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ اگر طالبان افغانستان میں غیرملکی طاقتوں کے نہ ہونے پر اصرار کرتے ہیں تو اس مشن کے لیے ایک نجی سکیورٹی کمپنی استعمال کی جا سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ طالبان کابل ایئرپورٹ کے باہر سکیورٹی کو یقینی بنا سکتے ہیں لیکن ایئرپورٹ کے اندر سکیورٹی کے لیے زیادہ قابل اعتماد طریقہ کار کی ضرورت ہو گی۔ ترکی کی طرف سے طالبان کو بتا دیا گیا ہے کہ ہم ایئرپورٹ کو آپریشنل بنانے کے مشن کا حصہ نہیں بنیں گے اگر ہمارے یونٹس ایئرپورٹ کی سکیورٹی میں شامل نہیں ہوتے۔اگر طالبان کو بیرونی طاقتوں کی موجودگی پر اعتراض ہے تو کسی نجی سکیورٹی کمپنی کی مدد لی جا سکتی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -