31 کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر بجلی کے بل بھجوانے کا انکشاف، وفاقی وزیر برائے توانائی کا ردعمل بھی سامنے آگیا

31 کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر بجلی کے بل بھجوانے کا انکشاف، وفاقی وزیر برائے ...
31 کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر بجلی کے بل بھجوانے کا انکشاف، وفاقی وزیر برائے توانائی کا ردعمل بھی سامنے آگیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر برائے توانائی حماد اظہر نے کہا ہے کہ  میں نے پاور ڈویژن کے حکام کو 31 کی بجائے 37 روز کی بنیاد پر بجلی کے بل بھجوانے کے معاملے کی جانچ پڑتال کے احکامات دے دیے ہیں۔ کسی بھی دانستہ کوتاہی کے ثابت ہونے پر سخت ایکشن لیا جائے گا۔

اس سے قبل یہ خبریں سامنے آئی تھیں  کہ آٹھ ماہ کے دوران ملتان، سکھر، کراچی،  لاہور، حیدر آباد، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے لاکھوں صارفین کو بجلی کے بل طے شدہ 31 روز کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر کئی بار بھیجے گئے۔  ان آٹھ ماہ کے دوران 37 روز کے دوران استعمال کی گئی بجلی کے سب سے زیادہ بل ملتان کی پاور کمپنی میپکو نے بھیجے۔31روز میں 300 یونٹ کا بل 3200 روپے بنتا ہے، لہٰذا  اس طرح صرف ایک روز کے اضافے سے بلوں میں 600 روپے کا اضافہ ہوجا تا ہے۔

مزید :

قومی -